کورونا وائرس کا پھیلاؤ، یو اے ای میں عیدالفطر کے موقع پر عیدی دینے پر بھی پابندی عائد

کورونا وائرس کا پھیلاؤ، یو اے ای میں عیدالفطر کے موقع پر عیدی دینے پر بھی پابندی عائد
سورس:   فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

دبئی: عالمگیر موذی وباءکورونا وائرس نے ایک سال سے زائد عرصے سے معمولات زندگی کو بہت زیادہ متاثر کیا ہے جس سے ہر قسم کے تہوار اور سماجی تعلقات پر بھی اثرات مرتب ہوئے ہیں اور یہی وجہ ہے کہ متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں عیدالفطر پر بھی مختلف پابندیوں کا اعلان کیا گیا ہے۔ 

کورونا وائرس کی وجہ سے گزشتہ برس کی طرح اس سال بھی رمضان المبارک کے حوالے سے سٹینڈرڈ آپریٹنگ پروسیجرز (ایس او پیز ) جاری کئے گئے تھے اور عید کے حوالے سے علیحدہ پابندیوں کا اعلان کیا گیا ہے جس کے تحت عید کے موقع پر بچوں کیلئے سب سے اہم چیز ’عیدی‘ پر بھی پابندی عائد کر دی گئی ہے، امارات حکام نے کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے باعث نقدی اور تحائف کی صورت میں عیدی دینے پر پابندی لگائی ہے۔ 

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق متحدہ عرب امارات (یو اے ای) میں نیشنل ایمرجنسی کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (این سی ای ایم اے) نے عیدالفطر پر مختلف احتیاطی تدابیر کا اعلان کیا ہے۔یو اے ای کی وفاقی اتھارٹی کی جانب سے 29 رمضان سے 3 شوال تک عیدالفطر کی چھٹیوں کا اعلان کیا گیا ہے اور متعلقہ اتھارٹی کی جانب سے کورونا حفاظتی قواعد کا اعلان بھی کیا گیا ہے۔

یو اے ای حکام نے ہدایات جاری کی ہیں کہ عید الفطر کے موقع پر عید کی تقریبات کو ایک ہی گھر میں رہنے والے افراد تک محدود رکھیں اور میل جول سے گریز کریں۔ اماراتی شہریوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ عیدالفطر کے پر مسرت موقع پر میل جول اور اجتماعات سے گریز کریں اور اپنی عید گھر میں گزاریں۔

عید کے موقع پر ذاتی حیثیت میں مبارکباد دینے کی بجائے برقی مواصلاتی ذرائع کے استعمال سے عید کی مبارکباد دینے کی بھی ہدایت کی گئی ہے اور پڑوسیوں کے مابین تحائف اور کھانے پینے کے تبادلے سے کی بھی ممانعت ہے جبکہ عیدی دینے سے گریز کی ہدایت بھی کی گئی ہے اور اس حوالے سے جاری ہونے والے اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ شہری نقدی یا تحائف کی صورت میں عیدی کی مقبول روایت سے بھی دور رہیں۔ 

حکام کا کہنا ہے کہ اگر عیدی دینا بہت ہی ضروری ہے تو بینک اکاؤنٹ میں آن لائن ذرائع سے رقم منتقل کی جاسکتی ہے۔ اس کے ساتھ ہی بزرگوں اور دائمی بیماریوں میں مبتلا افراد کے ساتھ بیٹھے ہوئے ماسک پہننے اور جسمانی فاصلے کو یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی ہے۔