عمر سرفراز چیمہ کو دستور کے تحفظ پر شرمناک طریقے سے ہٹانے کی کوشش کی گئی: عمران خان 

عمر سرفراز چیمہ کو دستور کے تحفظ پر شرمناک طریقے سے ہٹانے کی کوشش کی گئی: عمران خان 

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ گورنر پنجاب عمر سرفراز چیمہ کو دستور کے تحفظ پر شرمناک طریقے سے ہٹانے کی کوشش کی گئی ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت کی جانب سے گورنر پنجاب کو عہدے سے ہٹانے پر ردعمل دیتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ پنجاب میں اس کھلی دستور شکنی کا خاموشی سے تماشہ دیکھا جارہا ہے، امپورٹڈ کٹھ پتلیاں پنجاب میں آئینی انتشار اورفساد کو ہوا دے رہی ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پہلے گھوسٹ انتخاب کے ذریعے کٹھ پتلی کو بطور وزیر اعلیٰ صوبے پر مسلط کیا گیا اور تمام دستوری تقاضے بالائے طاق رکھتے ہوئے صدر کے منصب کی توہین کی گئی۔ لازم ہے کہ عدالت عظمیٰ صورتحال کی نزاکت کے پیش نظر معاملے کو ازخود دیکھے۔ پنجاب میں ضمیر فروشوں کا معاملہ بھی بلا تاخیر انجام تک پہنچایا جائے۔

واضح رہے کہ حکومت پاکستان نے گورنر پنجاب عمر سرفراز چیمہ کو عہدے سے ہٹانے کا نوٹیفکیشن جاری کیا ہے۔ سینئر جوائنٹ سیکرٹری کیبنٹ تیمور تجمل کے دستخط سے جاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ گورنر پنجاب کو وزیراعظم کی ایڈوائس پر عہدے سے ہٹایا گیا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی نئے گورنر پنجاب کی تعیناتی تک قائم مقام گورنر کے فرائض انجام دیں گے۔ قبل ازیں صدر مملکت عارف علوی نے گورنر پنجاب کو ہٹانے کی وزیراعظم کی ایڈوائس مسترد کردی تھی۔

مصنف کے بارے میں