محبوب کے ساتھ وقت گزارنے کیلئے خاتون کا جعلی اغوا کاڈرامہ

محبوب کے ساتھ وقت گزارنے کیلئے خاتون کا جعلی اغوا کاڈرامہ

پیرس:فرانس میں ایک خاتون کو اپنے ہی اغوا ہونے کا ڈراما کرنے کے جرم میں عدالت نے چھ ماہ قید کی معطل سزا سنائی ہے۔ اس خاتون کا یہ سب کرنے کا مقصد اپنے محبوب کے ساتھ وقت گزارنا تھا۔


تفصیلات کے مطابق25 سالہ سینڈی گائی لارڈ انتہائی دائیں بازو کی جماعت نیشنل فرنٹ کی ایک کارکن ہیں اور عدالتی کارروائی میں بتایا گیا کہ ان کے اغوا کے جعلی واقعے کے باعث ایک ہیلی کاپٹر سمیت 50 فوجی انھیں ڈھونڈنے کے لیے حرکت میں آ گئے تھے۔سینڈی گائی لارڈ پہلے ہی اپنے شوہر سے علیحدگی اختیار کر چکی ہیں اور اپنے بوئے فرینڈ کے ساتھ رہتی ہیں تاہم یہ منصوبہ انھوں نے ایک تیسرے شخص کے ساتھ وقت گزارنے کے لیے بنایا۔عدالت نے ان پر 5000 یورو کا جرمانہ عائد کیا اورانھیں ماہرِ نفسیات سے مدد حاصل کرنے کا حکم دیا۔

سینڈی گائی لارڈ کے بوائے فرینڈ نے جولائی میں پولیس کو اس وقت اطلاع دی جب سینڈی نے اپنے بوائے فرینڈ کو ایک ٹیکسٹ میسج بھیجا اور کہا کہ انھیں ایک کالی کار کی ڈگی میں بند کر کے کہیں لے جایا جا رہا ہے۔حکام نے ان کی تلاش 24 گھنٹوں تک جاری رکھی۔ تاہم ان کے بعد وہ خود ہی واپس منظر عام پر یہ کہتی ہوئی آگئیں کہ ان کے اغوا کاروں نے انھیں بس ایسے ہی جانے دیا۔ اس موقعے پر اْن پر ذہنی دباؤ کے کوئی اثرات نہیں تھے۔بعد میں انھوں نے جب اپنی کہانی سنائی تو اس میں بھی متعدد بار تضاد پایا گیا جس کے بعد حکام کو شک ہوا کہ وہ بھوٹ بول رہی ہیں۔