مولانا فضل الرحمان کے بھائی کو عہدے سے ہٹا دیا گیا

مولانا فضل الرحمان کے بھائی کو عہدے سے ہٹا دیا گیا

کمشنر افغان مہاجرین ضیاء الرحمان جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کے بھائی ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

پشاور: وفاقی حکومت نے کمشنر افغان مہاجرین ضیاء الرحمان کو عہدے سے ہٹانے ان کے خلاف تحقیقات کی منظوری دے دی۔سرکاری ذرائع کےمطابق کمشنر افغان مہاجرین ضیاء الرحمان جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کے بھائی ہیں۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ ضیاء الرحمان کو عہدے سے ہٹانے اور ان کے خلاف تحقیقات سے ہٹانے کی منظوری وفاقی کابینہ نے دی ہے اور وزیراعظم کے مشیر اسٹیبلشمنٹ ارباب شہزاد کو تحقیقاتی رپورٹ تیار کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

 

ذرائع کے مطابق ضیاء الرحمان پی ٹی سی ایل کے ملازم تھے اوررپورٹ میں پتا چلایا جائے گا کہ ان کو صوبائی مینجمنٹ سروس میں کیوں اور کیسے شامل کیا گیا۔ وہ ڈپٹی کمشنر خوشاب کیسے تعینات ہوئے اور کیسے بڑے عہدوں پر فائز رہے؟۔

 

 

اس حوالے سے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ ضیاء الرحمان کے خلاف تحیقیقات کا حکم دیا ہے۔ وہ خوشاب میں ڈی سی بھی تعینات کیے گئے تھے اور پتا چلایا جائے گا کہ ضیاء الرحمان ڈپٹی کمشنر کیسے لگے۔

 

انہوں نے کہا کہ ضیاء الرحمان کو پاناما کیس کے دوران کمشنر افغان مہاجرین لگایا گیا۔ ان کو ہٹا کر ان کی جگہ دوسرے افسر کو تعینات کیا جائے گا۔

 

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کی حکومت میرٹ کی پالیسی پر یقین رکھتی ہے۔