خالد مقبول، نسرین جلیل، حیدر عباس اور خوش بخت شجاعت اشتہاری قرار

خالد مقبول، نسرین جلیل، حیدر عباس اور خوش بخت شجاعت اشتہاری قرار

آئندہ سماعت پر فرد جرم عائد کی جائے گی، فائل فوٹو

کراچی: انسداد دہشت گردی کی عدالت نے اشتعال انگیز تقریر اور میڈیا ہاؤسز پر حملے کے 2 مقدمات میں خالد مقبول صدیقی، نسرین جلیل اور خوش بخت شجاعت سمیت حیدر عباس رضوی کو اشتہاری قرار دے دیا۔

 

کراچی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں اشتعال انگیز تقریر اور میڈیا ہاؤسز پر حملے کے 2 مقدمات کی سماعت ہوئی جس سلسلے میں ڈاکٹر فاروق ستار، عامر خان، خواجہ اظہار الحسن اور دیگر عدالت میں پیش ہوئے۔

 

مزید پڑھیں: پنجاب اسمبلی کا اجلاس 15 اگست کی صبح 10 بجے طلب
 

22  اگست کے 2 مقدمات میں ایک ملزم فیصل کی عدم حاضری کے باعث فرد جرم عائد نہیں ہو سکی جس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ 2 سال گزر گئے ہیں ابھی تک فرد جرم عائد نہیں ہوئی۔ ہر پیشی پر کوئی نہ کوئی غیر حاضر ہوتا ہے۔ آئندہ سماعت پر فرد جرم عائد کی جائے گی اور کوئی غیر حاضر ہوا تو اسکے وارنٹ گرفتاری جاری ہوں گے۔

 

عدالت نے اشتعال انگیز تقریر اور میڈیا ہاؤسز پر حملے کے 2 مقدمات میں خالد مقبول صدیقی، خوش بخت شجاعت، حیدر عباس رضوی اور نسرین جلیل سمیت دیگر کو اشتہاری قرار دے دیا جب کہ کیس کی مزید سماعت بغیر کسی کارروائی کے 8 ستمبر تک ملتوی کر دی۔

 

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں