نئی دہلی: سونیا گاندھی کے بیٹےراہول گاندھی بھارت کی سب سے بڑی اپوزیشن جماعت انڈین نیشنل کانگریس کے بلا مقابلہ نئےصدر منتخب ہو گئے۔ 

کانگریس کے سینئر رہنما ملاپالے راما چندرن نے کہا کہ 47 سالہ راہول گاندھی پارٹی صدارت کے امیدوار تھے اور ان کے مقابلے میں کوئی بھی رکن کھڑا نہیں ہوا جس کے بعد وہ بلامقابلہ صدر منتخب ہوگئے۔راہول گاندھی ہفتے کے روز حلف اٹھانے کے بعد باضابطہ طور پر پارٹی کی صدارت سنبھال لیں گے۔نئی دہلی میں کانگریس کے ہیڈکوارٹرز کے باہر پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ”میں راہول گاندھی کے انڈین نیشنل کانگریس کا بلامقابلہ صدر منتخب ہونے کا اعلان کرتا ہوں، یہ ایک تاریخی موقع ہے“۔
خیال رہے کہ اس سے قبل راہول گاندھی کی والدہ سونیا گاندھی پارٹی کی صدر تھیں اور ان کے پاس یہ عہدہ گزشتہ دو دہائیوں سے موجود تھا۔ کافی عرصے سے یہ قیاس آرائیاں جاری تھیں کہ راہول گاندھی کو پارٹی کی باگ ڈور سونپ دی جائے گی۔راہول گاندھی کے والد، دادی اور پر دادا سب ہی وزیراعظم رہ چکے ہیں اور وہ 2013 سے کانگریس کے نائب صدر تھے جبکہ 2014 کے عام انتخابات میں پارٹی کی انتخابی مہم انہوں نے ہی چلائی تھی اور اس انتخابات میں کانگریس کو بدترین شکست ہوئی تھی۔