سندھ ، صحرائے تھر میں لکڑی کے کوئلے سے ماحول متاثر

سندھ ، صحرائے تھر میں لکڑی کے کوئلے سے ماحول متاثر

تھر: صحرائے تھر میں درختوں کی کٹائی اور لکڑی سے کوئلہ بنانے کے کاروبار نے موسم اور ماحول کو بری طرح متاثر ہورہا ہے۔گزشتہ چند سالوں سے یہاں درختوں کی بے دریغ کٹائی اورلکڑی جلاکرکوئلہ بنانے سینہ صرف صحرا کاحسن چھن گیاہے ،ساتھ ہی ماحولیاتی آلودگی میں بھی اضافہ ہورہاہے۔تھرمیں اکیس ہزار مربع کلو میٹر رقبے میں دو لاکھ انتالیس ہزار ایکڑ اراضی کا شمار جنگلات میں ہوتا ہے جہاں روہیڑو کنڈی گگرال اور پومبٹ جیسیدرجنوں اقسام کے درخت ہیں ۔اس کٹائی سے نایاب درخت بھی ختم ہورہے ہیں اورجڑی بوٹیاں بھی ۔


ڈسٹرکٹ فارسیٹ آفیسر غلام اکبربلیدی نے درختوں کی کٹائی سے لاعلمی ظاہرکرتے ہوئے کہا کہ جب درخت کاٹے ہی نہیں جارہے توکارروائی کیسی؟درخت ،پودے اورہریالی قدرت کی نعمت ہیں،تھرکے صحرامیں توان کی قدرواہمیت اوربھی زیادہ ہے۔ایسے میں درختوں کی دیکھ بھال اورحفاظت کی زمہ داری بھی مزید بڑھ جاتی ہے۔

نیوویب ڈیسک< News Source