چینی فوجی 54 سال بعد اپنے آبائی گھر پہنچ گیا

چینی فوجی 54 سال بعد اپنے آبائی گھر پہنچ گیا

بیجنگ :بھارت میں گذشتہ 54 سال سے پھنسے ہوئے چینی فوج کے 77 سالہ وینگ قوئی طویل انتظار کے بعد آخر کار چین واپس پہنچ گئے ،ان کے ہمراہ ان کے بیٹی اور بیٹا بھی تھے ،ان کے بیٹے وشنو وینگ نے برطانوی نشریاتی ادارے سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ وہ بیجنگ پہنچ گئے ہیں،انھوں نے بتایا کہ اس کے لیے ان کے والد کو ضروری ایگزٹ پیپرز مل گئے تھے۔


خیال رہے کہ وینگ قوئی کے مطابق 1963 میں وہ غلطی سے انڈیا میں گھس گئے اور پکڑے گئے جبکہ انڈیا حکام کے مطابق وہ انڈیا میں بغیر کاغذات داخل ہوئے تھے۔ وینگ قوئی اپنے اوپر عائد جاسوسی کے الزامات کی تردید کرتے رہے ۔

وینگ قوئی مختلف جیلوں میں چھ سے سات سال رہے اور اس کے بعد انھیں مدھیہ پردیش کے ایک گاوں تروڑی میں چھوڑ دیا گیا تھا۔80 کی دہائی میں پہلی بار خطوط کے ذریعے چین میں خاندان کے ساتھ ان کا رابطہ ہوا اور 40 سال میں پہلی بار 2002 میں فون پر ان کی بات ان کی ماں سے ہوئی۔ان کی بھارت میں ہی ایک مقامی خاتون سے شادی ہوئی تھی جن سے ان کا ایک بیٹے اور دو بیٹیاں ہیں۔