قندھار : افغانستان میں منگل کے روز ہونے والے دھماکوں میں ہلاکتوں کی تعداد 50 تک جا پہنچی ہے، جاں بحق ہونے والوں میں 5 یو اے ای کے سفارت کار بھی شامل ہیں۔

 غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کی جانب سے جاری اطلاعات کے مطابق گورنر قندھار کے گیسٹ ہاؤس میں ہونیوالے خودکش حملے میں متحدہ عرب امارات کے پانچ سفارتی اہلکاروں سمیت 9افراد مارے گئے ، دھماکے وقت متحدہ عرب امارات کے سفیرجمعہ محمد عبداللہ الکابی اپنے ساتھیوں سمیت افغان حکام کے ساتھ میٹنگ میں مصروف تھے ۔

 زخمیوں میں اماراتی سفیربھی شامل ہے۔ بدھ کو متحدہ عرب امارات نے اعلان کیا ہے کہ شہداءکے اعزازمیں قومی پرچم سرنگوں رہا۔

 دبئی کے امیر شیخ محمد بن راشد المکتوم نے دھماکوں کی مذمت کرتے ہوئے کہاکہ’ایسے لوگوں کی قتل وغارت گری کی کوئی انسانی ، اخلاقی یا مذہبی دلیل نہیں جو لوگوں کی مدد کرنے کی کوشش کررہے تھے ‘۔

 دوسری طرف کابل میں پارلیمان کے مرکزی دروازے پر خودکش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا جس کے فوری بعد سڑک پر کھڑی ایک گاڑی میں بھی دھماکہ ہوگیا اور مجموعی طور پر 30 افراد ہلاک اور80 سے زائد زخمی ہوئے جبکہ ہلاک افراد میں پارلیمان کے عملے کے ارکان سمیت عام شہری شامل ہیں۔