ڈیم کی تعمیر کا معاملہ، وزیر توانائی اور وزیر خزانہ سپریم کورٹ میں طلب

ڈیم کی تعمیر کا معاملہ، وزیر توانائی اور وزیر خزانہ سپریم کورٹ میں طلب
خواہش تھی کہ میرے ہوتے ہوئے معاملہ حل ہو جاتا مگر بعض خواہشیں خواہشیں ہی رہ جاتی ہیں، چیف جسٹس۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: سپریم کورٹ نے نئیں گاج ڈیم کی تعمیر کیس کی سماعت کے دوران وزیر توانائی، وزیر خزانہ اور سیکرٹری کابینہ کو 15 جنوری کو طلب کر لیا۔ چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار اور جسٹس اعجازالاحسن پر مشتمل دو رکنی بنچ نے نئیں گاج ڈیم کی تعمیر کیس کی سماعت کی۔


اس موقع پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا منصوبہ بندی کمیشن کی سنٹرل ڈویلپمنٹ ورکنگ پارٹی کی میٹنگ میں ڈیم کی تعمیر کی سفارش قومی اقتصادی کونسل کی ا یگزیکٹیو کمیٹی کو کر دی گئی ہے۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا اس طرح تو یہ معاملہ ایکنک میں جا کر پھنس جائے گا اور خواہش تھی کہ میرے ہوتے ہوئے معاملہ حل ہو جاتا مگر بعض خواہشیں خواہشیں ہی رہ جاتی ہیں۔

جس پر جسٹس اعجازالاحسن نے کہا ابھی ایک ہفتہ باقی ہے اور یاد رہے کہ چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار 17 جنوری کو ریٹائر ہو رہے ہیں۔

عدالت نے وزیر خزانہ، وزیر توانائی اور سیکرٹری کابینہ کو منگل 15 جنوری کو طلب کرتے ہوئے ہدایت کی کہ آئندہ پیر تک سی ڈی ڈبلیو پی کے اجلاس کے منٹس عدالت میں پیش کئے جائیں۔