پی ڈی ایم اداروں پر دباﺅ ڈال کر این آر او کی متلاشی ہے، شاہ محمود قریشی

پی ڈی ایم اداروں پر دباﺅ ڈال کر این آر او کی متلاشی ہے، شاہ محمود قریشی
کیپشن:   پی ڈی ایم اداروں پر دباﺅ ڈال کر این آر او کی متلاشی ہے، شاہ محمود قریشی سورس:   فائل فوٹو

اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پاکستان کا دفاع کرنے کی پوری صلاحیت رکھتے ہیں اس لئے بھارت ہم پر ہرگز حاوی نہیں ہو سکتا۔ بھارت پاکستان میں دہشت گردوں کی پشت پناہی کر رہا ہے جبکہ پی ڈی ایم مثبت نہیں ایک منفی اتحاد ہے اور یہ اداروں پر دباو ڈال کر این آراو حاصل کرنا چاہتی ہے ۔

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ بھارت چاہتا تھا کہ وہ افغانستان میں اسٹیک ہولڈر بن جائے لیکن اسے ناکامی ہوئی اور اب وہ افغانستان میں امن خراب کر رہا ہے۔ ہم نے اقوام متحدہ سمیت عالمی برادری سے ڈوزیئر شیئر کر دیا ہے جس میں بھارت کا مکروہ چہرہ بے نقاب کرنے کی کوشش کی گئی ہے۔

امریکا میں انتقال اقتدار اور پاکستان پر اس کے اثرات پر وزیر خارجہ نے کہا کہ ریاستی تعلقات میں ہمیشہ مفادات مقدم ہوتے ہیں جبکہ ڈونلڈ ٹرمپ کا اپنا ایک منفرد انداز تھا وہ ٹویٹس سے اظہار کرتے تھے لیکن نئی امریکی حکومت کا انداز مختلف ہو گا کیونکہ نو منتخب صدر جوبائیڈن خارجہ امور پر خاصی مہارت رکھتے ہیں، وہ پاکستان اور خطے سے پوری طرح واقف ہیں اور وہ یہاں بہت سے افراد کو جانتے ہیں اور ہم بھی ان کی سوچ کو سمجھتے ہیں۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ کوئی مثبت نہیں بلکہ ایک منفی اتحاد ہے اور ان کا مقصد صرف عوام کی جانب سے منتخب کردہ حکومت کو گھر بھیجنا ہے، وہ عمران خان کو نقصان پہنچانا اور اداروں پر دباو ڈال کر این آراو حاصل کرنا چاہتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا استعفوں کے معاملے پر پی ڈی ایم میں یکسوئی نہیں کیونکہ لانگ مارچ پر بھی ابھی تک کوئی حتمی فیصلہ نہیں ہوا اور یہ تاخیر اس لیے ہو رہی ہے کہ ان میں ابھی تک اتفاق نہیں کہ وہ 31 جنوری کی ڈیڈ لائن کے بعد وہ فیصلے کریں گے۔