ساتھی طالب علموں نے اپنی کلاس فیلو کی شادی رکوا دی،پورے علاقے میں ہلچل مچ گئی

ساتھی طالب علموں نے اپنی کلاس فیلو کی شادی رکوا دی،پورے علاقے میں ہلچل مچ گئی

نئی دہلی: بھارتی میں دوگنی عمر کے شخص سے زبردستی بیاہی گئی لڑکی کی مدد کیلئے سکول کے طالب علموں نے کمر کس لی جنہوں نے لڑکی کو ڈھونڈ کر عدالت کے سامنے پیش کردیا۔بھارتی ٹی وی کے مطابق بھارتی شہر جے پور میں 16سالہ طالبہ کے والدین نے اسے سکول سے اٹھا کر دوگنی عمر کے شخص کے پلو سے باندھ دیا ۔ واقعے کا علم ہونے کے بعد سکول کے طالب علم لڑکی کے گھر پہنچ گئے۔


طالب علموں نے لڑکی کے والدین سے اس کے گھر کا پتہ پوچھا اور انکار پر اپنی مدد آپ کے تحت ہی اس کے گھر کا کھوج لگا لیا جہاں پہنچنے پر لڑکی نے بتایا کہ اسے زبردستی شادی کے بندھن میں باندھا گیا ہے ۔

وہ مزید تعلیم حاصل کرنا چاہتی ہے اور شوہر کیساتھ رہنے کو تیار نہیں ۔اپنی کلاس فیلو کی سسکیاں سن کر بچوں کا ہجوم اسے اپنے ساتھ شہر لے آیا ۔کمسن طالب علموں نے پولیس کو شکایت درج کروانے کی کوشش کی تاہم پولیس نے ان کی بات سننے سے نکار کردیا۔

بعد ازاں ایک تنظیم کی مدد سے یہ بچے فیملی کورٹ جا پہنچے جہاں لڑکی نے اپنی شادی کو کالعدم قرار دینے کی درخواست کردی۔اس کے ساتھ ہی اس نے اپنی منقطع تعلیم کا سلسلہ بھی دوبارہ شروع کردیا اور اسکول واپسی پر اس کا پرجوش استقبال کیا گیا۔