شعلے کے ایک سین کی عکس بندی میں تین سال لگ گئے تھے: امیتابھ بچن

شعلے کے ایک سین کی عکس بندی میں تین سال لگ گئے تھے: امیتابھ بچن

ممبئی: بالی ووڈ کی مشہور فلم شعلے جو 1975 میں ریلیز ہوئی اور اس فلم نے باکس پر اپنی کامیابی کے جھنڈے گاڑے اور اس کے ڈائیلاگ بھی اتنے مشہور ہوئے کہ آج بھی لوگوں کو زبانی یاد ہیں۔ اس فلم کے حوالے سے بالی ووڈ کے لیجنڈری اداکار نے 42 سال بعد ایک ایسا انکشاف کیا جس سے فلمی حلقے بھی ششدرہ رہ گئے۔


انہوں نے بتایا کہ فلم کے ایک منظر میں جیا لالٹین کی روشنی بند کر رہی ہیں اور میں باہر کی طرف بیٹھا ہارمونیکا بجا رہا تھا جب کہ اس منظر کو عکس بند کرنے کے لیے خاص قسم کی روشنی درکار تھی اور ہمارے فوٹو گرافی کے ہدایتکار ڈی ویچا غروب آفتاب کے وقت کی عکاسی کے خواہش مند تھے.

آپ یقین نہیں کریں گے کہ اس منظر کو عکس بند کرنے میں ہدایتکار رمیش سپی نے 3 سال لگائے. جس کے بعد وہ اس سین کی عکس بندی کرنے میں کامیاب ہو گئے۔

واضح رہے اس فلم میں دھرمیندر، امیتابھ بچن، امجد خان، ہیما مالنی اور جیا بچن نے اہم کردار ادا کیا تھا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں