پارلیمینٹ جانے والے تمام راستے خاردار تاریں اور بیرئیر لگا کر سیل کر دئیے گئے

پارلیمینٹ جانے والے تمام راستے خاردار تاریں اور بیرئیر لگا کر سیل کر دئیے گئے

اسلام آباد: وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی انتظامیہ نے جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) کے ممکنہ احتجاج کے باعث پارلیمنٹ جانے والے تمام راستے خار دار تاریں اور بیرئیر لگا کر سیل کر دیئے ہیں۔ 

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد میں ڈی چوک اورنادرا چوک سے پارلیمینٹ کے انٹری پوائنٹ سیل کر دئیے گئے ہیں اور سیکیورٹی اہلکار تعینات ہیں۔ یہ انتظامات اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی کال پر ممکنہ احتجاج کے پیش نظر کئے گئے ہیں۔ 

دوسری جانب اسلام آباد میں جمعیت علمائے اسلام (ف) کے تمام کارکنوں کو شخصی ضمانت اور ضمانتی مچلکوں پر رہا کر دیا گیا، رہائی کے بعد جے یو آئی کے تمام کارکن اور دونوں رکن قومی اسمبلی تھانہ آبپارہ سے روانہ ہو گئے۔ 

واضح رہے کہ گزشتہ شب اسلام آباد میں پارلیمنٹ لاجز کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا تھا کہ صبح تک اراکین پارلیمنٹ اور ساتھیوں کو رہا نہ کیا گیا تو صبح 9 بجے کے بعد کارکنان پھر سڑکوں پر نکل آئیں گے۔ 

مصنف کے بارے میں