آگرہ میں تیز آندھی کے باعث تاج محل کو جزوی نقصان

 آگرہ میں تیز آندھی کے باعث تاج محل کو جزوی نقصان

آگرہ: بھارت کے شہر آگرہ میں گزشتہ شب تیزآندھی کے باعث تاج محل کو جزوی نقصان پہنچا ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق 130 کلو میٹر فی گھنٹے کی رفتار سے چلنے والی آندھی سے جنوبی مینار اور شاہی دروازے متاثر ہوئے ہیں۔


آندھی کے سبب تاج محل جنوبی دروازے کا مینار گر گیا جبکہ چھوٹا سفید گنبد بھی متاثر ہوا ہے۔ تاج محل کے مرکزی دروازہ روضہ کا 12 فٹ بلند مینار بھی آندھی سے گر گیا ۔ واضح رہے 2016 میں بھی تاج محل کا ایک مینار متاثر ہوا تھا۔

تاج محل بھارت کے شہر آگرہ میں واقع ایک مقبرہ ہے۔ اس کی تعمیر مغل بادشاہ شاہ جہاں نے اپنی بیوی ممتاز محل کی یاد میں کروائی تھی۔ یہ تقریباً 1648ء میں مکمل تعمیر کیا گیا۔ اس کی تعمیراتی طرز فارسی، ترک، بھارتی اور اسلامی طرز تعمیر کے اجزاء کا انوکھا ملاپ ہے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: چوہدری نثار نے ڈان لیکس سے متعلق نیا انکشاف کر دیا

1983ء میں تاج محل کو اقوام متحدہ کے ادارہ برائے تعلیم، سائنس اور کلچر نے عالمی ثقافتی ورثے میں شمار کیا۔ اس کے ساتھ ہی اسے عالمی ثقافتی ورثہ کی جامع تعریف حاصل کرنے والی بہترین تعمیرات میں سے ایک بتایا گیا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں