ایف آئی اے نے جہانگیر ترین اور ان کے بیٹے کو کل طلب کر لیا

ایف آئی اے نے جہانگیر ترین اور ان کے بیٹے کو کل طلب کر لیا
کیپشن:   ایف آئی اے نے جہانگیر ترین اور ان کے بیٹے کو کل طلب کر لیا سورس:   فائل فوٹو

لاہور: وفاقی تحقیقاتی ایجنسی (ایف آئی اے) نے جہانگیر ترین اور ان کے بیٹے علی ترین کو کل بروز منگل طلبی کا نوٹس جاری کر دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے لاہور کی جانب سے بھیجے گئے نوٹس میں جہانگیر ترین اور علی ترین سے 8 سوالوں کے فوری جواب مانگے گئے ہیں۔ جہانگیر ترین کو 13 اپریل کو جواب لے کر حاضر ہونے کی ہدایت کی گئی ہے تاہم یہ بھی کہا گیا ہے کہ جہانگیر خان ترین کمپنی سیکٹری کے ذریعے بھی جواب جمع کروا سکتے ہیں۔

ایف آئی اے کے نوٹس میں کہا گیا ہے کہ اگست 2020 سے ان سوالات کے جواب مانگ رہے ہیں اور جہانگیر خان ترین نے جمعہ کے دن سوالات کے جوابات دینے کا وعدہ کیا۔

ایف آئی اے کے سوالات

سوالات میں کہا گیا ہے کہ جے کے فارمز کی تمام مشینری کی اصل رسیدیں جمع کروائیں، جے کے فارمز کے 35 ہزار ایکڑ کے رقبے کے ثبوت جمع کروائیں۔ مسلم کمرشل بینک کی رپورٹ جمع کروائیں جبکہ مشینری اور 35 ہزار ایکڑ رقبے کی تخمینہ رپورٹ جمع کروائیں، برطانیہ میں خریدی گئی جائیدادوں کی منی ٹریل دیں۔

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے جہانگیر ترین اور علی ترین ایف آئی اے بینکنگ کورٹ لاہور میں پیش ہوئے تھے۔ بینکنگ کورٹ کے باہر میڈیا سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارے خلاف بے بنیاد مقدمات بنائے گئے ہیں اور میرے خلاف 3مقدمات ہیں جبکہ پاکستان میں 80 شوگر ملز ہیں لیکن نشانے پر صرف میں ہوں۔

انہوں نے کہا کہ ہم تحریک انصاف سے انصاف مانگ رہے ہیں جبکہ میرے اور میرے بیٹے کے اکاؤنٹ منجمد کر دیے گئے ہیں۔ اکاؤنٹ کیوں منجمد کیے، اس سے کیا فائدہ ، یہ سب کون کر رہا ہے؟ ظلم بڑھتا جا رہا ہے اور میری وفاداری کا امتحان لیا جا رہا ہے۔