کامیاب جوان پروگرام، قرضوں کی حد کو بڑھا کر ڈھائی کروڑ روپے کر دیا گیا

کامیاب جوان پروگرام، قرضوں کی حد کو بڑھا کر ڈھائی کروڑ روپے کر دیا گیا
پروگرام کے لیے جتنا بھی پیسہ چاہیے ہو گا ہم دیں گے، مشیر خزانہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے خوشخبری دیتے ہوئے بتایا ہے کہ حکومت نے کامیاب جوان پروگرام میں قرضوں کی حد کو پچاس لاکھ سے بڑھا کر ڈھائی کروڑ روپے کر دیا ہے۔


پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کامیاب جوان پروگرام میں قرضے دیئے جا رہے ہیں اور اس کے لیے ہر ممکن فنڈز کی فراہمی یقینی بنا رہے ہیں۔ عام آدمی وزیراعظم کی پالیسیوں کا محور ہے اور پروگرام کے لیے جتنا بھی پیسہ چاہیے ہو گا ہم دیں گے۔

انہوں نے بتایا کہ اب تک 2900 نوجوانوں میں ایک ارب روپے سے زائد کے قرضے تقسیم ہو چکے ہیں جبکہ مزید 7500 ککیلئے قرضوں کی منظوری دی جا چکی ہے۔ اس سلسلے میں بینکوں کی تعداد کو بھی بڑھا دیا ہے۔

مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کا نے کہا کہ بلوم برگ سمیت عالمی ادارے پاکستان کی معاشی بہتری کا اعتراف کر رہے ہیں جبکہ موڈیز نے بھی ہمارے ملک کی اکانومی کو مستحکم قرار دیا ہے۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے معاون خصوصی عثمان ڈار کا کہنا تھا کہ میں عبدالحفیظ شیخ کا شکریہ ادا کرتا ہوں، 13 اگست سے کامیاب جوان پروگرام کی ویب سائٹ پر درخواست آ جائے گی۔

عثمان ڈار نے بتایا کہ کامیاب جوان کا مقصد پاکستان میں روزگار پیدا کرنا ہے، اس پروگرام سے دس لاکھ نوجوان کو روزگار حاصل ہوگا۔ پاکستان کے 72 سال میں کسی وزیراعظم اور حکومت نے کبھی نوجوانوں کے لیے نہیں سوچا تھا، میں عمران خان کا شکر گزار ہوں۔