اسلام آباد ہائیکورٹ کا زلفی بخاری کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم

اسلام آباد ہائیکورٹ کا زلفی بخاری کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم
زلفی بخاری کا نام آف شور کمپنیوں کے باعث پاناما لیکس میں بھی آیا ہے۔۔۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: عمران خان کے قریبی دوست کو کلین چِٹ مل گئی۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے وزیر اعظم کے مشیر برائے اوورسیز پاکستانی زلفی بخاری کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست منظور کر لی۔


 12

زلفی بخاری نے اپنا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کے اقدام کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کرتے ہوئے نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے خارج کرنے کی استدعا کی تھی۔ فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر فاضل بنچ نے 4 دسمبر کو فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل ڈویژن بینچ نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے زلفی بخاری کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا۔

خیال رہے کہ زلفی بخاری وزیراعظم عمران خان کے قریبی ساتھیوں میں شمار کیے جاتے ہیں اور وہ وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے اوورسیز پاکستانی ہیں۔

پی ٹی آئی کی حکومت سے قبل وہ عمران خان کے ہمراہ عمرے پر روانہ ہو رہے تھے کہ ان کا نام بلیک لسٹ میں ہونے کی وجہ سے امیگریشن حکام نے انہیں بیرون ملک جانے سے روک دیا تھا تاہم کچھ دیر بعد انہیں جانے کی اجازت دے دی گئی تھی۔

زلفی بخاری کا نام آف شور کمپنیوں کے باعث پاناما لیکس میں بھی آیا ہے جس بناء پر نیب میں ان کے خلاف تحقیقات جاری ہیں اور اس سلسلے میں وہ کئی بار نیب میں پیش بھی ہو چکے ہیں۔

 3