لاہور، پولیس کا مسلم لیگ ن کے کارکنوں کیخلاف کریک ڈاؤن، درجنوں گرفتار

 لاہور، پولیس کا مسلم لیگ ن کے کارکنوں کیخلاف کریک ڈاؤن، درجنوں گرفتار

لاہور پولیس نے مسلم لیگ ن کے دفاتر پر بھی چھاپے مارے گئے۔۔۔۔فائل فوٹو

لاہور: پولیس نے نواز شریف کے استقبال کی تیاریاں کرنے والے مسلم لیگ ن کے کارکنوں کیخلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا۔ رات گئے لاہور پولیس نے نواز شریف کے استقبال کے لیے جانے والے مسلم لیگ ن کے کارکنوں کیخلاف کریک ڈاؤن شروع کر دیا۔

 

مسلم لیگ ن کے دفاتر پر جگہ جگہ چھاپے مارے گئے اور کئی مقامی رہنما گرفتار بھی کیے گئے جس کے بعد لیگی کارکنوں کی جانب سے احتجاج جاری ہے۔

 

مزید پڑھیں: سپریم کورٹ نے نجی میڈیکل کالجز میں داخلوں پر پابندی لگا دی

حراست میں لیے گئے لیگی کارکنوں میں فیصل ٹاون تحفظ امن کمیٹی کے چیئرمین عاشر جٹ، کاہنہ سے مسلم لیگ ن کے وائس چیئرمین محمد شفقت، یو سی 98 چیرمین مزمل گجر، چیئرمین یوسی 78 سید عامر شاہ گلشن راوی، یو سی 48 کے چیئرمین چودھری محمد علی گجر، یو سی 59 کے چیئر مین باؤمحمد رفیق، یو سی 98 چیرمین مزمل گجر شامل ہیں۔

 

اس کے علاوہ فیروزوالہ یوسی 2 مسلم لیگ ن کے چئیرمین شیخ کاشف، یوسی 4 کے ساجد چوہان اور جوہر ٹاؤن سے مسلم لیگ ن کے چئیرمین ملک نثار احمد کھوکھر کو بھی گرفتار کر لیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: این اے 125 میں دھاندلی نہیں ہوئی، عدالت نے فیصلہ سُنا دیا

پولیس نے یو سی 33 یکی گیٹ وائس چیئرمین احمد رشید بٹ کے دفتر اور فیروز والہ شاہدرہ پولیس نے مسلم لیگ ن کے چئیرمینز اور وائس چیئرمینز کے گھروں پر چھاپے مارے جب کہ مزید گرفتاریوں کے لیے چھاپوں کا سلسلہ جاری ہے۔ لاہور کے مختلف علاقوں میں ن لیگی کارکنان نے ٹائر جلا کر سڑکیں بند کر دیں اور گرفتاریوں کے خلاف احتجاج کیا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں