سچن ٹنڈولکر، سارو گنگولی اور لکشمن نے کوچ ڈھونڈنے کا معاوضہ مانگ لیا

سچن ٹنڈولکر، سارو گنگولی اور لکشمن نے کوچ ڈھونڈنے کا معاوضہ مانگ لیا

ممبئی: بھارتی کرکٹ بورڈ نے جگموہن ڈالمیا کے دور میں کرکٹ ایڈوائزری کمیٹی قائم کی تھی جس میں سابق اسٹار بیٹسمین سچن ٹنڈولکر، سارو گنگولی اور لکشمن شامل ہیں۔ اس کمیٹی کا مقصد کرکٹ معاملات پر اپنی ماہرانہ رائے دینا تھا بعد میں اسے سینئر ٹیم کو نئے کوچ کی تلاش کی ذمہ داری بھی سونپی گئی۔ اسی کمیٹی نے ہی موجودہ ہیڈ کوچ انیل کمبلے کا تقرر کیا تھا اور اب نئے کوچ کیلئے امیدواروں سے انٹرویو بھی اسی کمیٹی نے ہی کرنے ہیں۔ حیران کن طور پر اپنے وقت کے معروف کرکٹرز اور بھارتی کرکٹ میں بگ تھری کا درجہ رکھنے والے کھلاڑیوں نے معاوضے کا مطالبہ کر دیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ان کی جانب سے بورڈ کے چیف ایگزیکٹیو راہول جوہری سے یہ مطالبہ کیا گیا جس نے ان کا پیغام سپریم کورٹ کی مقرر کردہ کمیٹی آف ایڈمنسٹریٹرز کو پہنچانے کی یقین دہانی کرائی ہے جو کہ اس بارے میں فیصلہ کرے گی۔ دوسری جانب کرکٹ حکام ایڈوائزی کمیٹی کے اس مطالبے پر کافی ناخوش ہیں۔ ایک آفیشل کا کہنا ہے کہ یہ بھی بورڈ کی دوسری سب کمیٹیوں کی طرح ایک کمیٹی ہے جوکہ باقی کمیٹیوں کے ممبران کو کوئی ادائیگی نہیں کی جاتی تو انہیں کیسے معاوضہ دیا جا سکتا ہے۔

پہلے بھی ان کی جانب سے معاوضوں کا مطالبہ کیا گیا تھا مگر تب اسے رد کر دیا گیا تھا۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ گنگولی کرکٹ ایسوسی ایشن آف بنگال کے صدر بھی ہیں جبکہ وہ اور لکشمن بی سی سی آئی کے کنٹریکٹ یافتہ کمنٹیٹرز بھی ہیں۔

واضح رہے کہ ایڈوائزی کمیٹی نے سب سے پہلے معاوضوں کا مطالبہ 2015 میں کیا تھا تاہم اس وقت بی سی سی آئی کے آنجہانی صدر جگموہن ڈالمیا نے اس مطالبے کو مسترد کر دیا تھا۔ ایک سابق بورڈ آفیشل کا کہنا ہے کہ جگموہن کا اس مطالبے پر کہنا تھا کہ کمیٹی ممبران کو معاوضہ دینا بورڈ کی روایت نہیں ہے انھیں صرف میٹنگز کے موقع پر رہائش، گاڑی اور ڈیلی الانس ہی دیا جا سکتا ہے اس سے زیادہ کچھ بھی نہیں دیا جائے گا۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں