فتووں کی روک تھا م کے لیے مصری پارلیمنٹ نے قانون سازی پر غور شروع کردیا

فتووں کی روک تھا م کے لیے مصری پارلیمنٹ نے قانون سازی پر غور شروع کردیا

شام :مصر میں آئے دن مختلف علمائ کرام کی جانب سے فتووں کو بے جا سلسلہ نہ روکا جا سکا۔مگر اب فتووں کے رجحان کی روک تھام کے لیے قانون سازی پر غور شروع کردیا۔


مصری میڈیا کے مطابق پارلیمنٹ میں اس وقت تین قوانین زیر بحث ہیں ، جن کا مقصد ملک میں فتووں کے بڑھتے ہوئے رجحان کو روکنا ہے ۔

نئی قانون سازی کے تحت فتوے جاری کرنے کی اجازت مخصوص اداروں تک محدود کرنے، حکومتی اجازت کے بغیر علما کے مذہبی ٹی وی پروگرام میں شرکت کرنے پر قید اور ایک لاکھ مصری پائونڈ جرمانہ بھی عائد کیا جائے گا ۔

حکومت نے یقین دہانی کرائی ہے کہ اس قانون سازی کا مقصد مذہبی اداروں کی مدد کرنا اور عوامی مفادات کو تحفظ فراہم کرنا ہے۔