چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کا انتخاب، ووٹنگ جاری

چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کا انتخاب، ووٹنگ جاری

اسلام آباد: چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین سینیٹ کا انتخاب، ووٹنگ جاری، سینیٹر حافظ عبدالکریم نے پہلا ووٹ کاسٹ کر دیا۔ مقابلہ برابر ہونے پر کسی امیدوار کے اکثریت لینے تک ووٹنگ جاری رہے گی۔


سینیٹ رولز کے مطابق چیئرمین کیلئے کم ازکم 53 ووٹوں کا حصول ضروری نہیں، خفیہ ووٹنگ میں 103 سینیٹرز حصہ لیں گے۔ چیئرمین سینیٹ کے لیے حکمران اتحاد کے راجا ظفرالحق میدان میں آگئے ہیں جبکہ اپوزیشن اتحاد کے صادق سنجرانی چیئرمین سینیٹ کے امیدوار ہیں۔ ڈپٹی چیئرمین کے لیے حکمران اتحاد کے عثمان کاکڑ امیدوار ہیں جبکہ اپوزيشن کی طرف سے سلیم مانڈوی والا ڈپٹی چیئرمین کے امیدوار ہیں۔

صدر مملکت ممنون حسین نے سردار یعقوب خان ناصر کو پریزائیڈنگ افسر مقرر کر دیا جو اجلاس کی صدارت کریں گے۔ چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین کے لئے خفیہ رائے شماری جاری جس کے لیے سیاسی جماعتوں اور آزاد حیثیت میں منتخب ہونے والے سینیٹرز اپنا حق رائے دہی استعمال کریں گے۔

پیپلزپارٹی اور پاکستان تحریک انصاف نے صادق سنجرانی کو چیئرمین سینیٹ اور سلیم مانڈوی والا کو ڈپٹی چیئرمین نامزد کر دیا۔ بلاول بھٹو زرداری نے رضاربانی کیلئے الگ پارٹی پلان کا تذکرہ بھی کر دیا۔ وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے بلاول بھٹو سے اظہار تشکر بھی کر دیا۔

وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو، پاکستان پیپلز پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف کا دعویٰ ہے کہ چیئرمین بنوانے کے لیے ان کے پاس مطلوبہ تعداد موجود ہے۔

دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ (ن) کے رہنما مشاہد اللہ خان اور خواجہ سعد رفیق بھی دعویٰ کر چکے ہیں ان کے پاس مطلوبہ تعداد سے زیادہ سینیٹرز کی حمایت موجود ہے۔