'دوسروں کو اپنے نظریات ماننے پر مجبور کروں تو تشدد پسند یا دہشت گرد کہلاؤں گا'

'دوسروں کو اپنے نظریات ماننے پر مجبور کروں تو تشدد پسند یا دہشت گرد کہلاؤں گا'

کراچی: جامعہ کراچی میں طلبا سے خطاب کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا کسی شخص کے سامنے خود کو مسلمان ثابت نہیں کرنا کیونکہ یہ میرا اور اللہ کا معاملہ ہے۔ مسلمان ہونے کے لئے نعرہ لگانے کی ضرورت نہیں بلکہ عمل سے ثابت کریں۔


ان کا مزید کہنا تھا دوسروں کو اپنے نظریات ماننے پر مجبور کروں گا تو تشدد پسند یا دہشت گرد کہلاؤں گا اور ہم اسلام کے اصولوں پر عمل کریں تو دنیا ہمیں اسلامی ملک پہچانے گی۔ پاکستان اللہ کا تخلیق کردہ سب سے خوبصورت ملک ہے۔ ہر موسم ہر پھل، دریا ،پہاڑ اور صحرا سب اس ملک میں ہے جبکہ جغرافیائی لحاظ سے بھی پاکستان کی اہمیت سب سے زیادہ ہے۔

میجر جنرل آصف غفور نے بتایا کہ سویت یونین جب افغانسان آیا تو کہا گیا اس سے اسلام کو خطرہ ہے اور امریکہ کی مدد سے سوویت کو افغانستان سے نکالا تاہم نائن الیون کے بعد امریکہ نے افغانستان پر حملہ کیا اور امریکہ سے لڑنے والوں کو وہاں پناہ نہیں ملی تو پاکستان آ گئے لیکن ہم نے آپریشن ضرب عضب کامیابی سے مکمل کیا اور مرحلہ وار اپنے علاقوں سے دہشتگردوں کا خاتمہ کیا آج پاکستان میں دہشت گردوں کی کوئی پناہ گاہ موجود نہیں۔

انہوں نے کہا کسی بھی ملک کو تباہ کرنے کے لیے اس کی سیکیورٹی فورسز کو نشانہ بنایا جاتا ہے جبکہ پاکستان اور جاپان میں سب سے پہلے بوئنگ طیارے آئے تھے۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں