جنسی ہراسانی کا الزام،اداکار نانا پاٹیکر کیخلاف تنوشری دتہ کی مدعیت میں مقدمہ درج

جنسی ہراسانی کا الزام،اداکار نانا پاٹیکر کیخلاف تنوشری دتہ کی مدعیت میں مقدمہ درج

Image by Republic tv

ممبئی :بالی ووڈ میں جنسی ہراسانی کے واقعات کے بعد اداکارہ تنوشری دتہ کی جانب سے الزام عائد کیا گیا کہ نانا پاٹیکر نے ان کو جنسی طور پر ہراساں کیا ہے جس کے بعد کافی شورو غوغا دہو ا اور اب آخر کار بھارتی سینئر اداکار نانا پاٹیکر کیخلاف جنسی ہراسانی کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق مقدمہ اداکارہ تنوشری دتہ کی مدعیت میں ممبئی پولیس نے درج کیا۔نانا پاٹیکر کے علاوہ دیگر 3 شخصیات بھی مقدمے میں نامزد ہیں جن میں کوریوگرافر گنیش اچاریہ، پروڈیوسر سمیع صدیقی اور ڈائریکٹر راکیش سارنگ شامل ہیں۔

خیال رہے کہ حال ہی میں تنوشری دتہ نے بھارتی میڈیا کو ایک انٹرویو میں نانا پاٹیکر پر 2008 میں ایک فلم کی شوٹنگ کے دوران جنسی ہراساں کیے جانے کا الزام عائد کیا تھا۔

انہوں نے مزید کہا تھا کہ میں نام لے کر بتانا چاہتی ہوں کہ نانا پاٹیکر فلم 'ہارن اوکے پلیز' کی شوٹنگ کے پہلے ہی دن میرے ساتھ غلط طرح سے پیش آئے تھے، یہاں تک کہ میرے سولو گانے کی شوٹنگ کے وقت بھی انہوں نے ساتھ ڈانس کرنے کی شرط رکھی۔

تنوشری دتہ نے انٹرویو کے دوران بتایا کہ نانا پاٹیکر نے زور زبردستی کرکے ان کے ساتھ ڈانس کیا جس کی شکایت انہوں نے فلم کے پروڈیوسر اور ڈائریکٹر سے بھی کی لیکن دونوں نے کان نہیں دھرے۔

نانا پاٹیکر کے وکیل رجیندرا شرودکر کے مطابق تنوشری دتہ کے لگائے جانے والے تمام الزامات جھوٹے اور بے بنیاد ہیں جنہیں وہ مسترد کرتے ہیں۔نانا پاٹیکر نے تنوشری سے معافی اور غلطی تسلیم کرنے کے اعتراف کا مطالبہ بھی کیا۔