ایران میں فوجی مشقوں کے دوران جدید ترین ہتھیاروں کی نمائش

ایران میں فوجی مشقوں کے دوران جدید ترین ہتھیاروں کی نمائش

تہران : جنوب مشرقی ایران میں محمد رسول اللہ چار نامی عظیم فوجی مشقوں کے موقع پر ایران کے جدید ترین فوجی ہتھیار بمعہ ڈرون طیارے متعارف کرئے گئے۔ایران کی بری فوج کے عہدیدار بریگیڈیر جنرل رضا زوارہ ای نے کہا کہ سنائپر سے بارہ سو میٹر دور ہدف کو نشانہ بنایا جا سکتا ہے۔


بریگیڈیر جنرل رضا زوارہ ای نے کہا کہ سنائپر ہتھیار، ایران کی بری فوج کی بنیادی ضروریات میں سے ہے اور حالیہ برسوں کے دوران اس قسم کے کئی ہتھیار بنائے جا چکے ہیں جن میں شاہر اور باہر نامی ہتھیار بھی شامل ہیں۔

اسی طرح فوجی مشقوں کے دوسرے روز فرپاد نامی ڈرون طیارے کو بھی بروئے کار لایا گیا۔ ایران کا یہ ایک ایسا ڈرون طیارہ ہے جو دشمن کی جانب سے ریڈار سسٹم میں رخنہ اندازی کی صورت میں فوری طور پر اپنے ٹھکانے کی طرف واپس لوٹ جاتا ہے۔