مودی کی پالیسی نے پانچ گولیاں لگنے کے بعد بھی زندہ بچ جانیوالے بھارتی فوجی کی جان لے لی

بھارتی فوج کی سینٹرل ریزروپولیس فورس کا ایک اہلکار جو 1990میں مقبوضہ کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں چھاتی میں پانچ گولیاں لگنے کے بعد زندہ بچ گیا

مودی کی پالیسی نے پانچ گولیاں لگنے کے بعد بھی زندہ بچ جانیوالے بھارتی فوجی کی جان لے لی

نئی دلی : بھارتی فوج کی سینٹرل ریزروپولیس فورس کا ایک اہلکار جو 1990میں مقبوضہ کشمیر کے ضلع بارہمولہ میں چھاتی میں پانچ گولیاں لگنے کے بعد زندہ بچ گیا تھا نے بار بار چکر لگانے کے باوجود بینک سے پیسے نکلوانے میں ناکامی پر خودکشی کر لی ہے ۔


54سالہ راکیش چند نے جو 2012میں ہیڈ کانسٹیبل ریٹائرڈ ہو اتھا نے علاج معالجے کیلئے رقم نکلوانے کیلئے بار بار بینک کے چکر لگائے تاہم ناکامی پر اس نے اپنی سروس رائفل سے گولی مارکر خودکشی کر لی ۔ راکیش کے بیٹے سوشل کمار نے میڈیا کو بتایا کہ اسکے والد کو اپنے دل کے مرض کے علاج معالجے کیلئے رقم کی اشد ضرورت تھی اور اسے صرف 15ہزار روپے پنشن ملا کرتی تھی جس میں سے وہ چھ سے سات ہزار روپے اپنے علاج پر صرف کرتا تھا تاہم مسلسل بینک سے رقم نہ ملنے پر اس نے اپنی جان لے لی ۔