ٹیکس بڑھنے سے 7 ہزار والا سمارٹ فون 11 ہزار روپے کا ہو گیا

ٹیکس بڑھنے سے 7 ہزار والا سمارٹ فون 11 ہزار روپے کا ہو گیا
حکومت نے عوام کے لئے سمارٹ فونز خریدنا انتہائی مشکل بنا دیا ہے، موبائل فونز ڈیلرز ایسوسی ایشن۔۔۔۔۔فائل فوٹو

لاہور: حکومت نے خزانہ بھرنے کے لئے موبائل فونز کی درآمد پر بھاری ڈیوٹی عائد کر دی۔ ٹیکس بڑھنے سے مختلف اقسام کے سمارٹ فونز 4 ہزار سے 50 ہزار روپے تک مہنگے ہو گئے۔


موبائل فونز ڈیلرز ایسوسی ایشن کے مطابق حکومت نے عوام کے لئے سمارٹ فونز خریدنا انتہائی مشکل بنا دیا ہے۔ ٹیکس آمدن میں اضافے کی خاطر حکومت نے موبائل فونز کی درآمد پر ڈیوٹی 4 ہزار سے 50 ہزار روپے تک بڑھائی ہے جس کے بعد 7 ہزار والا سمارٹ فون 11 ہزار روپے کا ہو گیا۔

14 ہزار والا سمارٹ فون اب 20 ہزار روپے کا کر دیا گیا اور 21 ہزار والا سمارٹ فونز 8 ہزار اضافے 29 ہزار روپے کا ہو گیا جبکہ 1 لاکھ والا سمارٹ فونز اب ایک لاکھ 42 ہزار روپے کا ہو گیا۔

موبائل فونز ڈیلرز کا کہنا ہے کہ حکومت نے ٹیکس آمدن کی خاطر موبائل فونز کی درآمد پر بھری م ڈیوٹی تو عائد کر دی ہیں مگر حکومت کے اس فیصلے سے درآمد کنندگان کو مشکلات کا سامنا ہے جبکہ عوام کے لئے بھی اتنے مہنگے فونز خریدنا انتہائی مشکل ہو جائے گا اس لئے حکومت کو اپنے اس فیصلے نظر ثانی کرنی چاہیے۔