اسرائیل کی فلسطینی خاتون کیساتھ زبردست ناانصافی

اسرائیل کی فلسطینی خاتون کیساتھ زبردست ناانصافی

مقبوضہ بیت المقدس: اسرائیل نے فلسطینی قانون ساز کونسل رکن خاتون کو زبردست ناانصافی کا نشانہ بناتے ہوئے اس پر مقدمہ چلائے بغیرسزا سنا کر جیل بھیج دیا۔


بین الاقوامی میڈیا کے مطابق اسرائیل کی فوجی عدالت نے انسانی حقوق کی کارکن فلسطینی خاتون خالدہ جرار کو 6 ماہ قید کی سزا سنا دی ہے۔ قابض پولیس نے انہیں جولائی کے شروع میں مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقے رملہ میں ان کے گھر پر چھاپہ مار کر گرفتار کیا۔ گرفتاری کے بعد فوجی عدالت نے انہیں ”انتظامی بنیاد پر “ قید کی سزا سنائی ہے۔ جس سے یہ مراد ہے کہ خالدہ جرار کو غیر معینہ مدت تک جیل میں رکھا جا سکتا ہے۔

فلسطینی تنظیم “پاپولر فرنٹ فار لبریشن آف فلسطین” کے سیاسی بیورو کی رکن خالدہ جرار اس سے پہلے بھی کئی بار جیل جا چکی ہیں ۔ اس سے پہلے2016 میں انہیں 15 ماہ کے لیے جیل بھیجا گیا تھا۔