گذشتہ مالی سال 2018-19ءکے دوران ملک کے تجارتی خسارہ میں 15.33 فیصد کی کمی ہوئی ہے ، ادارہ شماریات پاکستان

گذشتہ مالی سال 2018-19ءکے دوران ملک کے تجارتی خسارہ میں 15.33 فیصد کی کمی ہوئی ہے ، ادارہ شماریات پاکستان

اسلام آباد: گزشتہ مالی سال 2018-19ءکے دوران ملک کے تجارتی خسارہ میں 15.33 فیصد کی کمی واقع ہوئی ہے۔


ادارہ شماریات پاکستان (پی بی ایس) کے اعداد و شمار کے مطابق گزشتہ مالی سال کے دوران 31 ارب 82 کروڑ ڈالر تک کم ہو گیا جبکہ مالی سال 2017-18ءکے دوران ملک کا تجارتی خسارہ 37 ارب 58 کروڑ 30 لاکھ ڈالر ریکارڈ کیا گیا تھا۔ اس طرح مالی سال 2017-18ءکے مقابلہ میں گزشتہ مالی سال 2018-19ءکے دوران ملک کے تجارتی خسارے میں 15.33 فیصد یعنی 5 ارب 76 کروڑ 30 لاکھ ڈالر کی نمایاں کمی ہوئی ہے۔

پی بی ایس کے مطابق تجارتی خسارے میں کمی کا بنیادی سبب مجموعی قومی درآمدات میں 9.8 فیصد کی کمی ہے۔ رپورٹ کے مطابق مالی سال 2017-18ءکے دوران مجموعی درآمدات کا حجم 60 ارب 79 کروڑ 50 لاکھ ڈالر رہا تھا جبکہ گزشتہ مالی سال 2018-19ءکے دوران مجموعی ملکی درآمدات کا حجم 54 ارب 79 کروڑ 90 لاکھ ڈالر تک کم ہو گیا۔

اس طرح مالی سال 2017-18ءکے مقابلہ میں گزشتہ مالی سال 2018-19ءکے دوران درآمدات کے مجموعی قومی حجم میں 9.86 فیصد یعنی 5 ارب 98 کروڑ 60 لاکھ ڈالر کی نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

zuh-ex/mnm/zhm/saj 2213