مارچ سے جون 2020ء کے درمیان ترسیلات زر میں 8 فیصد کا اضافہ

مارچ سے جون 2020ء کے درمیان ترسیلات زر میں 8 فیصد کا اضافہ
صرف جون میں 51 فیصد اضافےسے 2 ارب 46 کروڑ ڈالر کی ترسیلات موصول ہوئیں، سٹیٹ بینک۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔فائل فوٹو

کراچی: بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے گزشتہ مالی سال ریکارڈ رقوم ملک میں بھیجی گئی۔ سٹیٹ بینک کا کہنا ہے کہ کورونا کی وبا کے باعث پاکستانی محنت کشوں نے اپنے اہل خانہ کی مدد کے لیے زیادہ ترسیلات بھیجی۔


گزشتہ مالی سال یعنی 20-2019 میں بیرون ملک مقیم پاکستانیوں نے 4.6 فیصد اضافے سے ریکارڈ 23ارب 12کروڑ ڈالر کی ترسیلات ملک بھیجیں۔

سٹیٹ بینک کے مطابق کورونا کی وبا کے دوران یعنی مارچ سے جون کے درمیان ترسیلات میں 8 فیصد کااضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ صرف جون میں 51 فیصد اضافےسے 2ارب 46 کروڑ ڈالر کی ترسیلات موصول ہوئیں، جس کی بڑی وجہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے ملک میں اپنے اہل خانہ کی لاک ڈاون میں مالی مدد کرنا تھا۔

سٹیٹ بینک کے مطابق حکومت اور مرکزی بینک کی کوششوں سے اور پالیسیوں نے بھی ترسیلات میں اضافے کو مدد دی۔ چھوٹی رقوم بھیجنے والوں کو ٹی ٹی چارجز کی واپسی کی سکیم میں توسیع سے بھی ترسیلات میں اضافہ ہوا۔