زلفی بخاری کا نام ای سی ایل سے نکالنے پر وزارت داخلہ سے رپورٹ طلب

زلفی بخاری کا نام ای سی ایل سے نکالنے پر وزارت داخلہ سے رپورٹ طلب

وزارت داخلہ نے زلفی بخاری کو 6 دن کے لیے عمرے پر جانے کی اجازت دی تھی، ذرائع۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: نگران وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک نے پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے قریبی دوست زلفی بخاری کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کے معاملے پر وزارت داخلہ سے رپورٹ طلب کر لی۔

واضح رہے کہ زلفی بخاری کا نام ای سی ایل پر تھا دو روز قبل انہیں عمران خان اور اہلخانہ کے ہمراہ چارٹرڈ طیارے کے ذریعے عمرے کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب روانا ہونا تھا لیکن ایف آئی حکام نے انہیں نام ای سی ایل میں ہونے کے باعث روک دیا تھا۔ جس کے بعد زلفی بخاری نے اپنا نام ای سی ایل سے نکلوانے کے لیے کافی تگ و دو کی اور وزارت داخلہ کے حکام سے اجازت ملنے پر وہ عمران خان کے ساتھ سعودی عرب روانہ ہو گئے تھے ۔

مزید پڑھیں: کتاب شائع ہونے سے پہلے کسی کی ساکھ کو کیسے نقصان پہنچا سکتی ہے، ریحام

ذرائع کا کہنا تھا کہ وزارت داخلہ نے زلفی بخاری کو 6 دن کے لیے عمرے پر جانے کی اجازت دی تھی۔ ذرائع کے مطابق زلفی بخاری دوہری شہریت رکھتے ہیں اور ان کے پاس پاکستان کے علاوہ برطانوی شہریت بھی ہے۔

 

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں