فلسطین میں یونیورسٹی کے طلباء نے ’گدھا ٹرانسپورٹ سروس شروع کردی

فلسطین میں یونیورسٹی کے طلباء نے ’گدھا ٹرانسپورٹ سروس شروع کردی

یوروشلم : فلسطین میں ایک انوکھی سیاحتی کمپنی قائم کر دی گئی ہے۔ یہ سیاحتی کمپنی فلسطین کے مغربی کنارے نابلس میں قائم کی گئی ہے جس کا اصل سرمایہ رقم نہیں بلکہ گدھے ہیں۔ ذرائع ابلاغ کے مطابق نابلس میں قائم النجاح یونیورسٹی کے طلباء نے ’گدھا ٹرانسپورٹ سروس‘ شروع کردی ہے جس کا اصل سرمایہ رقم نہیں بلکہ گدھے ہیں۔


اس سروس کا مقصد لوگوں کو فلسطین کے تاریخی مقامات کی سستے داموں سیر، مقامی کھانوں سے لطف اندوز ہونے اور پر فضاء مقامات کی سیر و تفریح کے مواقع مہیا کرنا ہے۔ وہ اپنے گاہکوں کو سیاحتی مقامات تک پہنچانے اور دیگر لوازمات کے لیے ایک گدھا صرف 25 ڈالر کرائے پر فراہم کرتے ہیں۔

سیاحتی کمپنی کے ایک بانی رکن مونس الحاج نے ’العربیہ ڈاٹ نیٹ‘ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ جامعہ النجاح کے طلباءنے یہ منفرد کمپنی اس لیے قائم کی تاکہ وہ اپنے تعلیمی اور دیگر اخراجات کے حصول میں مدد لے سکیں، اس سے طلباءاور دیگر افراد کو روزگارکے مواقع بھی ملیں گے اور والدین اور جامعہ پر بوجھ بھی نہیں پڑے گا۔