عراق اور ایران میں شدید زلزلہ ، 350ہلاکتیں

بغداد:ایران اور عراق کے سرحدی علاقوں میں زلزلے سے مرنیوالوں کی تعداد350 ہوگئی جبکہ زخمی 5 ہزار سے زائدہیں۔


تفصیلات کے مطابق زلزلہ اس قدر شدید تھا کہ دارالحکومت بغداد میں بھی محسوس کیا گیا۔ زلزلے کی زد میں آکے عراق کی سرحد سے متصل کئی دیہات تباہ ہوگئے اور بجلی کی فراہمی معطل بھی ہے۔ بڑے پیمانے پر تباہی کی اطلاعات ہیں۔ ایرانی حکام نے اپنے سرحدی علاقے میں300 سے زائد ہلاکتوں کی تصدیق کی ہے۔

سب سے زیادہ تباہی ایرانی صوبے کرمان شاہ میں ہوئی جہاں3 روزہ سوگ کا اعلان کردیا گیا۔ سرحد کے پار عراقی علاقے میں6افراد ہلاک ہوئے۔ کرمان شاہ کے شہر سرپل ذھاب میں 142 ہلاکتیں ہوئیں۔زلزلے سے متعدد عمارتیں اور مکانات بھی زمین بوس ہوگئے۔ بہت سے دیہات تو صفحہ ہستی سے ہی مٹ گئے جبکہ متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔

متعدد زخمیوں کی حالت تشویش ناک ہے تاہم ملبے تلے دبے افراد کو باہر نکالا جارہا ہے۔ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔زلزلے کا مرکز عراق کے کرد علاقے سلیمانیہ میں تھا جس کی گہرائی 33 کلو میٹر تھی۔واضح رہے کہ یوایس جی ایس نے زلزلے کی تباہی کے لحاظ سے اورنج الرٹ جاری کیا ہے جو شدید خطرے کے لئے جاری کیا جاتا ہے۔ زلزلے کی شدت 7.3 ریکار کی گئی تھی۔