سوئٹزر لینڈ کے شہری نے اپنا فن پارہ یادگار بنانے کیلئے جلد بیچ ڈالی

زیورخ : سوئٹزر لینڈ میں شہری نے اپنی جلد پر بنے وسیع ٹیٹو کو یادگار بنانے کیلئے جلد فروخت کر دی ۔ زیورخ کا ٹم اسٹینر کچھ عرصہ قبل تک خود بھی ایک ٹیٹو پارلر کا نگران تھا جہاں ٹیٹو بنائے جاتے تھے۔ یہ کام کرتے اور دیکھتے ٹم کو خود بھی ٹیٹو کا شوق ہوگیا نتیجتاً اس نے اپنی پیٹھ کی پوری جلد پر رنگین ٹیٹو بنوا ڈالا۔

سوئٹزر لینڈ کے شہری نے اپنا فن پارہ یادگار بنانے کیلئے جلد بیچ ڈالی

زیورخ : سوئٹزر لینڈ میں شہری نے اپنی جلد پر بنے وسیع ٹیٹو کو یادگار بنانے کیلئے جلد فروخت کر دی ۔ زیورخ کا ٹم اسٹینر کچھ عرصہ قبل تک خود بھی ایک ٹیٹو پارلر کا نگران تھا جہاں ٹیٹو بنائے جاتے تھے۔ یہ کام کرتے اور دیکھتے ٹم کو خود بھی ٹیٹو کا شوق ہوگیا نتیجتاً اس نے اپنی پیٹھ کی پوری جلد پر رنگین ٹیٹو بنوا ڈالا۔


اب ٹم کے خیال میں اس کے مرنے کی صورت میں اس کی جلد، جو اب ایک فن پارے میں تبدیل ہوچکی ہے، مٹی کا حصہ بن جائے گی اور اس کے حل کےلئے اس نے اپنی جلد کو ایک جرمن آرٹ کلیکٹر کے ہاتھ ڈیڑھ لاکھ یوروز میں فروخت کر دیا ہے۔ٹم نے اس سے معاہدہ کیا ہے کہ اس کے مرنے کے بعد اس کی جلد کو جسم سے علیحدہ کر کے فریم کروا کر کسی آرٹ گیلری میں رکھ دیا جائے گا۔