اسلام آباد :سابق وزیر اعظم اور مسلم لیگ ن کے صدر نواز شریف کی گزشتہ روز چوہدری نثار پر تنقید کے بعد سابق وزیر داخلہ کا ردعمل بھی سامنے آ گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق گزشتہ روز نواز شریف نے مسلم لیگ ن کے رہنماو¿ں کے ساتھ ایک ملاقات کی جس میں وہ بہت خوشگوار موڈ میں نظر آئے۔لیکن اسی ملاقات میں نواز شریف نے سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ مجھے موٹروے سے جانے کا مشورہ دینے والے کہاں ہیں جس پر باقی مسلم لیگ ن کے رہنماو¿ں نے کہا کہ وہ اب نظر نہیں آئیں گے۔

نواز شریف کی اس تنقید کے بعد چوہدری نثار نے رد عمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ نواز شریف کابذریعہ موٹروے جانے کا فیصلہ میرا نہیں تھا بلکہ یہ ساری سینئیر قیادت کا فیصلہ تھا۔چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ سینئیر قیادت کا ایک اجلاس ہوا تھا جس میں یہ فیصلہ کیا گیا تھا کہ نواز شریف لاہور جانے کے لئے موٹر وے کا راستہ استعمال کریں اور اس اجلاس میں نواز شریف، شاہد خاقان عباسی سمیت 11سینئیر رہنما شامل تھے۔اور ایک دو ارکان کے علاوہ باقی سب نے موٹر وے سے جانے کا مشورہ دیا تھا۔اور مری کی میتنگ کے بعد یہ خبر اخبارات میں بھی شائع ہوئی تھی۔