گزشتہ 3 سالوں میں حکومت نے اتنا قرضہ لیا کہ جان کر آپ حیران رہ جائیں گے

گزشتہ 3 سالوں میں حکومت نے اتنا قرضہ لیا کہ جان کر آپ حیران رہ جائیں گے

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ موجودہ حکومت نے گزشتہ 3سالوں کے دوران تقریباُُ 33کھرب 73ارب کا قرض لیا ۔ان قرضوں کے بعد قوم کا ہر بچہ مزید 16865 روپے کا مقروض ہو گیا۔


 وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے سینیٹ کو تحریری جواب میں بتایا کہ حکومت نے گزشتہ 3سالوں میں آئی ایم ایف ، عالمی بینک اور ملکی بینکوں سے مجموعی طورپر33کھرب 73ارب روپے بطور قرض لیے ، یکم جنوری 2014ءسے 31دسمبر کے دوران آئی ایم ایف سے ساڑھے 5 کھرب روپے جبکہ یکم جنوری سے 2014ءسے 30 نومبر 2016ءتک عالمی بینک سے 4 کھرب 42 ارب روپے قرضہ لیا۔انہوں نے اپنی رپورٹ میں مزید کہا ہے کہ اس عرصے میں ملکی بینکوں سے بھی 2376 ارب روپے کا قرض حاصل کیا گیا۔ملک میں موجودہ 20 کروڑ آبادی کے تخمینے کے مطابق قوم کا ہر فرد گزشتہ3 برس میں 16ہزار 8سو 65روپے کا مزید مقروض ہوگیا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ سلسلہ یونہی چلتا رہا تو 2018ءتک پاکستان کے صرف بیرونی قرضے ہی 100 کھرب تک پہنچ جائیں گے جن کو ادا کرنے کیلئے حکومت مزید قومی ادارے گروی رکھنے پر مجبور ہو جائے گی۔