غیر ملکی فنڈنگ کیس' اسلام آبادہائی کورٹ نے الیکشن کمیشن میں کارروائی رکوانے کیلئے پی ٹی آئی کی استدعا مستردکردی

غیر ملکی فنڈنگ کیس' اسلام آبادہائی کورٹ نے الیکشن کمیشن میں کارروائی رکوانے کیلئے پی ٹی آئی کی استدعا مستردکردی

اسلام آباد:اسلام آبادہائی کورٹ نے الیکشن کمیشن میں جاری غیر ملکی فنڈنگ کیس کی کارروائی روکنے کے لیے پی ٹی آئی کی استدعا مسترد کرتے ہوئے الیکشن کمیشن اور اکبر ایس بابر کو نوٹس جاری کردیئے۔جمعہ کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں پی ٹی آئی کی جانب سے الیکشن کمیشن میں جاری غیرملکی فنڈنگ کیس کی کارروائی روکنے کے لیے دائردرخواست کی سماعت ہوئی۔


جسٹس محسن کیانی نے پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے الیکشن کمیشن آف پا کستان میں پی ٹی آئی غیر ملکی فنڈنگ کیس کی کارروائی رکوانے اور حکم امتناع جاری کرنے کے حوالے سے دائر درخواست کی سماعت کی ۔ درخواست میں پی ٹی آئی کی جانب سے موقف اختیارکیا گیا کہ پولیٹیکل پارٹیز آرڈر2000کے تحت الیکشن کمیشن کو شہریوں کی شکایات پر کسی سیاسی جماعت کے خلاف کارروائی یا اس کے کھاتوں کی جانچ پڑتال کا اختیار نہیں۔

اس لیے الیکشن کمیشن کو غیرملکی فنڈنگ کیس کی سماعت سے روکا جائے۔موقف سننے کے بعد جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیئے کہ 2014سے یہ کیس چل رہا ہے، ہائی کورٹ پہلے بھی یہ کیس الیکشن کمیشن کو ریمانڈ بیک کرچکی ہے۔ عدالت عالیہ نے الیکشن کمیشن میں جاری غیر ملکی فنڈنگ کیس کی کارروائی روکنے کی پی ٹی آئی کی استدعا مسترد کردی جب کہ الیکشن کمیشن اور اکبر ایس بابر کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب جمع کرانے کا حکم دے دیا اور کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کردی گئی.

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں.