ایسی شادی جس میں نہ نکاح نہ پھیرے

ایسی شادی نہ نکاح نہ پھیرے

ایسی شادی جس میں نہ نکاح نہ پھیرے

دبئی : دنیا بھر میں منچلے شادی کیلئے نت نئے حربے استعمال کرتے ہیں مگر دبئی میں شادی کے بندھن میں بندھنے والے جوڑے نے پچھلے تمام ریکارڈز ہی توڑ ڈالے، مسلمان لڑکے جیند نے نہ اسلامی طریقے کے مطابق نکاح کیا اور نہ ہندو لڑکی گمیمیا نے منڈتے کے گرد پھیرے لیے۔


 ہندو لڑکی اور مسلمان لڑکے کی اس عجیب  وغریب شادی نے جس نے مذہبی اور سماجی کسی روایت کو ملحوظ خاطر نہیں رکھا اور اپنی مرضی سے نئے طریقے سے شادی کی۔بھارت سے  تعلق رکھنے والے مسلمان لڑکےجنید شیخ اور ہندو لڑکی گریما جوشی نے اپنی اپنی مذہبی رسومات کو ایک دوسرے کی محبت میں حائل نہ ہونے دیا۔

دونو ں کا تعلق بھارت کی پونا یونیورسٹی سےہے جہاں جنید ، گریما کا سینیر تھا، ایک ہی یونی ورسٹی میں ساتھ ہونے کے باوجود دونوں کے درمیان کبھی پیار جیسا جذبہ نہ ابھرا، تاہم ماسٹرز کرنے کے کچھ سالوں بعد جب دونوں کا آمنا سامنا دبئی میں اچانک ہوا تو پھر یہ نیا روپ دھارتی گئی اور دوستی شادی جیسے مقدس بندھن میں تبدیل ہوگیا۔ہندو اور مسلمان ہونے کے باعث انہیں اپنے گھر والوں کی مخالفت کا سامنا کر نا پڑا مگر تمام مخالفتوں کے باوجود دونوں اپنی اپنی محبت پہ قائم رہے اور شادی کرلی۔