امریکی ملٹری اتاشی کرنل جوزف خصوصی طیارے سے امریکا روانہ

امریکی ملٹری اتاشی کرنل جوزف خصوصی طیارے سے امریکا روانہ
image by face book

اسلام آباد: امریکی ملٹری اتاشی کرنل جوزف خصوصی طیارے سے امریکا روانہ ہوگئے ، پولیس نے کرنل جوزف سےمتعلق تمام ریکارڈامریکی حکام کے حوالے کردیا۔


سفارتی ذرائع کے مطابق کرنل جوزف پرپاکستانی فوجداری،دیوانی ،انتظامی قوانین لاگونہیں ہوتے،کرنل جوزف کو سفارتی استثنیٰ حاصل ہے، امریکی حکومت نےکرنل جوزف کاسفارتی استثنیٰ ختم کرنےسےانکارکردیاتھا۔

 کرنل جوزف،نور خان ایئربیس سےخصوصی طیارے پرروانہ ہوئے، امریکا نے کرنل جوزف کے خلاف کارروائی کی یقین دہانی کرائی ہے۔

یہ بھی پڑھیئے:پاکستانی شہری کو کچلنے والے سفارتکار کرنل جوزف کو لینے امریکی طیارہ پہنچ گیا

واضح رہے کہ7 اپریل کی سہ پہر 3 بجے امریکی ملٹری اتاشی نے اسلام آباد کے علاقے بارہ کہو کے قریب سگنل توڑ کر موٹرسائیکل سوار دو افراد کو کچل دیا تھا ،  حادثے میں عتیق بیگ نامی نوجوان موقع پر جاں بحق اور اس کا کزن شدید زخمی ہوگیا تھا .

جبکہ پولیس نے سفارتی استثنیٰ کے باعث کرنل جوزف کو جانے کی اجازت دی تھی, پولیس نے کار سرکار میں مداخلت کرنے پر سیکیورٹی افسر تیمور پیرزادہ کے خلاف تھانہ سیکریٹریٹ میں ایس ایچ او کی مدعیت میں مقدمہ درج کیا تھا۔

سفارتی ذرائع  نے دعویٰ کیا ہے کہ یہ فیصلہ امریکی ملٹری اتاشی کرنل جوزف کو حاصل استثنیٰ کی وجہ سے کیا گیا ، ذرائع دفتر خارجہ کے مطابق کرنل جوزف کے خلاف سفارتی استثنیٰ کی وجہ سے کارروائی نہیں کی جاسکتی، ویانا کنونشن 1961 کے تحت کرنل جوزف کواستثنیٰ حاصل ہے.

سفارتی ذرائع کے مطابق 1972 کے پاکستانی قانون کے تحت کرنل جوزف کواستثنیٰ ہے، کرنل جوزف سےمتعلق پولیس کاریکارڈامریکا کے حوالے کر دیا گیا ہے.

یاد رہے کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے امریکی سفارت کار کرنل جوزف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے حوالے سے مقتول عتیق کے والد کی درخواست پرفیصلہ سنایا تھا، جس کے مطابق ملزم کرنل جوزف کو مکمل استثنیٰ حاصل نہیں تھا۔ 

خیال رہے کہ گذشتہ ماہ 7 اپریل کو امریکی ملٹری اتاشی نے اسلام آباد کے علاقے بارہ کہو کے قریب سگنل توڑ کر موٹرسائیکل سوار دو افراد کو کچل دیا تھا۔

حادثے میں عتیق بیگ نامی نوجوان موقع پرجاں بحق اور اس کا کزن شدید زخمی ہوگیا تھا جبکہ پولیس نے سفارتی استثنیٰ کے باعث کرنل جوزف کو جانے کی اجازت دے دی تھی۔

سوشل میڈیا پر امریکی ملٹری اتاشی کی امریکہ روانگی کو کافی تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے ، خاص طور پر ایسے موقع پر جب عدالت کی جانب سے ان کا نام ای سی ایل میں ڈال دیا گیا تھا اور واضح کیا گیا تھا کہ اب امریکی اتاشی کو بیرون ملک جانے کی اجازت نہیں ہوگی.

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں