ایران عرب دنیا کا سب سے بڑا دشمن ہے: یمنی وزیر اعظم

صنعا:یمن کے وزیراعظم احمد بن دغر گذشتہ شام ملک کے عبوری دارالحکومت عدن سے اپنی کابینہ کے بعض ارکان کے ہمراہ سعودی عرب پہنچے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ایران عرب دنیا کا اولین دشمن ہے۔


تفصیلات کے  مطابق سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر جہاز سے اترنے کے بعد صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئےبن دغر نے کہا کہ وہ چند روز سعودی عرب میں قیام کریں گے۔یمنی وزیراعظم ایک ایسے وقت میں سعودی عرب پہنچے ہیں جب عرب اتحاد نے یمن کی بند کی گئی بندرگاہیں اور بین الاقوامی ہوائی اڈے چوبیس گھنٹوں میں کھولنے کا اعلان کیا ہے۔ تاہم باغیوں کے زیرقبضہ علاقوں میں ہوائی اڈے اور بندرگاہیں بدستور بند رہیں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب کے دورے کا مقصد یمنی حکومت اور عرب اتحاد کے درمیان کوآرڈینیشن کو مزید مضبوط کرنا، یمن میں آئینی حکومت کے استحکام میں اضافہ، باغیوں کو اسلحہ کی اسمگلنگ کی روک تھام اور جنگ سے متاثرہ شہریوں تک انسانی امداد کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے اقدامات کرنا ہے۔

احمد دغر نے کہا کہ یمن کے ایرانی حمایت یافتہ حوثی باغی پڑوسی ملکوں اور پوری دنیا کے امن کے لیے خطرہ ہیں۔ ایران تو عرب دنیا کا دشمن اول ہے۔

احمد بن دغر نے یمنی باغیوں کی طرف سے عالمی جہاز رانی کے راستوں بالخصوص بحر احمر، باب المندب اور دیگر مقامات پر تیل بردار بحری جہازوں کو نشانہ بنائے جانے کی دھمکیوں کو مسترد کردیا۔ ان کا کہنا تھا کہ یمن اور عرب خطے میں ایرانی پروگرام آخری سانسیں لے رہا ہے۔ ایرانی توسیع پسندانہ پروگرام کو یمن میں دفن کردیں گے۔