لاہور میں خواتین کی نازیبا ویڈیوز اور تصاویر جاری کرنے والی ہیکر لڑکی گرفتار

لاہور میں خواتین کی نازیبا ویڈیوز اور تصاویر جاری کرنے والی ہیکر لڑکی گرفتار
سورس: فوٹو: بشکریہ ٹوئٹر

لاہور: صوبائی دارالحکومت لاہور میں خواتین کی نازیبا ویڈیوز اور تصاویر جاری کرنے والی ہیکر لڑکی حنا کو گرفتار کر لیا گیا اور سے برآمد کئے گئے موبائل سے قابل اعتراض مواد اور واٹس ایپ نمبرز برآمد کر لئے گئے ہیں۔ 

میڈیا رپورٹس کے مطابق خواتین کی نازیبا ویڈیوز اور تصاویر جاری کرنے والی بلیک میلر خاتون حنا نے مردوں کو بھی پیچھے چھوڑ دیا جو دوسرے لوگوں کے اکاؤنٹ ہیک کرکے خواتین کی قابل اعتراض تصاویر اور ویڈیوز شیئر کرتی تھی۔ 

گرفتار کی گئی ہیکر خاتون سے تحقیقات میں انکشاف ہوا کہ حنا محمود نے شہری کے ہاٹ میل، سکائپ، انسٹاگرام کو ہیک کیا، اکاؤنٹ ہیک کر کے اس پر 2 خواتین کی قابل اعتراض تصاویر اور ویڈیوز شیئر کیں۔

فیڈرل انوسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) کے مطابق تحقیقات میں یہ بات بھی سامنے آئی کہ حنا نے واٹس ایپ کے 2نمبرز کے ذریعے بھی خواتین کی ویڈیوز وائرل کیں اور اس مقصد کیلئے ورچوئل پرائیویٹ نیٹ ورک (وی پی این) کا سہارابھی لیا تاکہ اسے ٹریس نہ کیاجاسکے۔

ذرائع کے مطابق ایف آئی اے نے ایک شہری اور ایک خاتون کی شکایت پرموبائل ڈیٹا سے ہیکر کا سراغ لگایا اور اسے گرفتار کیا جبکہ اس سے برآمد کئے گئے موبائل سے قابل اعتراض مواداور واٹس ایپ نمبرز بھی حاصل کر لئے۔ 

ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ لڑکی کے موبائل پر ویڈیوزوائرل کرنے کیلئے شہری کی آئی ڈیزاستعمال ہورہی تھیں جبکہ درخواست گزاروں کے خلاف قابل اعتراض مواد بھی موبائل فون سے برآمد ہوا ہے اور ہیکر لڑکی کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔