نہ گالی سے نہ گولی سے،کشمیر گلے لگانے سے ملے گا,نریندر مودی

نہ گالی سے نہ گولی سے،کشمیر گلے لگانے سے ملے گا,نریندر مودی

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے کہا کہ نیا انڈیا جمہوریت کی سب سے بڑی طاقت ہے۔ جمہوریت صرف ووٹ تک محدود نہیں۔ نیا انڈیا کی جمہوریت ایسی ہو گی جس میں نظام کے بجائے عوام سے ملک چلے گا۔


اپنے خطاب کی ابتدا میں ہی انھوں نے گورکھپور کے ایک ہسپتال میں درجنوں بچوں کی ہلاکت پر افسوس ظاہر کیا۔کشمیر کے مسئلے کا ذکر کرتے ہوئے انھوں نے کہا: 'نہ گالی سے اور نہ گولی سے، کشمیر کا مسئلہ گلے لگانے سے حل ہو گا۔‘

انھوں نے کہاہمیں کشمیر کے معاملے پر مل کر کام کرنا ہو گا (تاکہ) کشمیر کی جنت کو ہم دوبارہ محسوس کر سکیں اور ہم اس کے لیے پرعزم ہیں۔

نریندر مودی نے کہا کہ دہشت گردی کے معاملے پر نرمی برتنے کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔

انھوں نے پاکستان کا نام لیے بغیر کہا کہ 'جب سرجیکل سٹرائیکس ہوئیں تو دنیا نے ہماری طاقت کو تسلیم کیا۔ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہم اکیلے نہیں ہیں۔ دنیا کے بہت سے ملک ہماری مدد کر رہے ہیں۔

انھوں نے اپنی حکومت کی کارکردگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ کالے دھن اور بدعنوانی کے خلاف ہماری جنگ جاری رہے گی۔ہم ٹیکنالوجی کے ساتھ شفافیت لانے کی سمت میں کام کر رہے ہیں۔ملک میں نوٹ بندی کے اپنے فیصلے پر انھوں نے کہا:'نوٹ بندی سے ہم نے کالے دھن کو کنٹرول کرنے میں کامیابی حاصل کی ہے۔ تقریباً تین لاکھ کروڑ روپیہ بینکاری نظام میں واپس آیا۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں