نواز شریف کیخلاف 2 نیب ریفرنسز کی سماعت 20 اگست تک ملتوی

نواز شریف کیخلاف 2 نیب ریفرنسز کی سماعت 20 اگست تک ملتوی

سماعت کے دوران اڈیالہ جیل میں قید سابق وزیراعظم نواز شریف کو عدالت میں پیش کیا گیا۔۔۔فائل فوٹو

اسلام آباد: سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز اور فلیگ شپ انویسٹمنٹ ریفرنسز کی سماعت احتساب عدالت میں ہوئی جہاں تفتیشی افسر محبوب عالم کا مکمل بیان ریکارڈ نہ ہو سکا جس کے بعد سماعت پیر (20 اگست) تک کے لیے ملتوی کر دی گئی۔

 

احتساب عدالت نمبر دو کے جج محمد ارشد ملک نے نواز شریف کے خلاف نیب ریفرنسز کی سماعت کی۔ سماعت کے دوران اڈیالہ جیل میں قید سابق وزیراعظم نواز شریف کو عدالت میں پیش کیا گیا۔ آج سماعت کے دوران تفتیشی افسر محبوب عالم نے اپنا بیان ریکارڈ کروایا تاہم یہ بیان مکمل نہ ہو سکا جس کے بعد عدالت نے سماعت 20 اگست تک کے لیے ملتوی کر دی جہاں تفتشی افسر اپنا بیان مکمل کرائیں گے۔

 

مزید پڑھیں: مشتاق غنی خیبرپختونخوا اسمبلی کے اسپیکر منتخب

دوسری جانب عدالت نے پاناما جے آئی ٹی کے سربراہ واجد ضیاء کو بھی 20 اگست کو طلب کر لیا۔نواز شریف کو اڈیالہ جیل سے احتساب عدالت پہنچانے کے لیے آج نئی حکمت عملی اختیار کی گئی اور انہیں اڈیالہ جیل سے سیکیورٹی کے بڑے قافلے میں عدالت لایا گیا۔

 

قافلے میں بکتر بند گاڑی سمیت ایک لینڈکروزر بھی تھی لیکن احتساب عدالت کے باہر موجود مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کی بڑی تعداد کے پیش نظر خالی بکتر بند گاڑی کو فرنٹ گیٹ سے عدالت لے جایا گیا جبکہ نواز شریف کو دوسری گاڑی میں عدالت کے اندر پہنچایا گیا۔

 

اس موقع پر احتساب عدالت کے باہر لیگی کارکنوں نے احتجاج کیا۔ ایک کارکن بکتر بند گاڑی پر چڑھ گیا اور نواز شریف کے حق میں نعرے لگائے۔

 

یہ خبر بھی پڑھیں: گورنر پنجاب رفیق رجوانہ مستعفیٰ ہو گئے

واضح رہے کہ مذکورہ کیس کی 13 اگست کو ہونے والی سماعت کے دوران نواز شریف کو سخت سیکیورٹی میں بکتر بند گاڑی میں احتساب عدالت میں پیش کیا گیا تھا۔

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں