دہشتگردوں نے سیکیورٹی فورسز کے کیمپ کو دھماکے سے اڑا دیا ، 45 ہلاک

07:02 PM, 15 Aug, 2018

کابل:افغانستان کے صوبے بغلان میں دہشتگردی کا بڑا واقعہ ، دہشتگردوں نے سیکیورٹی فورسز کے بیس کیمپ پر دھاوا بول ڈالا ، دھماکے ، شدید فائرنگ ، 45 اہلکار ہلاک ہوگئے جبکہ دہشتگرد بآسانی فرار ہونے میں کامیاب رہے ۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان کا صوبہ بغلان ایک مرتبہ دھماکوں اور فائرنگ سے گونج اٹھا ، دہشتگردوں نے سیکیورٹی فورسز کے بیس کیمپ پر دھاوا بول دیا ، شدید فائرنگ اور دھماکوں سے 45 اہلکار ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے ۔

مزید پڑھیئے:فواد حسن فواد کی گرفتاری کے خلاف درخواست، عدالت نے نوٹس جاری کردیا
 

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ افغان حکام کا کہنا تھا کہ طالبان کے حملے میں 35 افغانستان کی مسلح افواج کے اہلکار جبکہ 10 مقامی پولیس اہلکار ہلاک ہوئے ہیں ،  افغان حکام کی جانب سے طالبان حملے اور  واقعے میں 45 سیکیورٹی اہلکاروں کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کردی گئی ہے جبکہ زخمیوں کے حوالے سے تفصیلات نہیں بتائی گئی۔

افغان میڈیا کا کہنا ہے کہ گزشتہ شب افغانستان کے صوبے قندھار میں ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر سپین بولدک کے قریب ایک گاڑی پر امریکی ڈورن طیاروں نے بمباری کی ہے، گاڑی پر ڈرون حملے کے نتیجے میں 2 مشتبہ افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ ریسکیو ادارے کے اہلکاروں نے حملے میں ہلاک ہونے والے افراد کی لاشوں کو قریبی اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جبکہ ڈرون حملے کا نشانہ بننے والی گاڑی مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہے۔

مزید پڑھیئے:ن لیگ سے وزیراعظم کا امیدوار تبدیل کرائیں گے ، بلاول بھٹو
 
 
افغان خبر رساں اداروں کا کہنا ہے کہ گاڑی پر امریکی ڈرون حملے بعد مغربی اتحادی افواج نیٹو اور افغان فورسز کی جانب سے افغانستان کے سرحدی علاقوں کا سرچ آپریشن بھی کیا گیا تھا۔

یاد رہے کہ ایک روز قبل افغانستان کے دارالحکومت کابل میں ایک خودکش بمبار نے الیکشن کمیشن کی عمارت میں گھسنے کی کوشش کی اور مرکزی دروازے پر سیکیورٹی اہلکاروں کی جانب سے روکے جانے پر خود کو دھماکے سے اڑا لیا جس کے نتیجے میں ایک پولیس اہلکار ہلاک اور کئی زخمی ہوئے تھے۔

 
 

مزیدخبریں