سعودی عرب کا تین ارب ڈالر سیف ڈیپازٹ کی مدت میں توسیع کا فیصلہ

سعودی عرب کا تین ارب ڈالر سیف ڈیپازٹ کی مدت میں توسیع کا فیصلہ

اسلام آباد: سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کیلئے تین ارب ڈالر سیف ڈیپازٹ کی مدت میں ایک سال کی مزید توسیع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق وزارت خزانہ کے ذرائع کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ 3 ارب ڈالر کے سیف ڈیپازٹ پر 3 فیصد سود بھی ادا کیا جائے گا جبکہ پاکستان کو ڈیفالٹ کا خطرہ ہوا تو رقم فوری واپس کرنا ہو گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ تین ارب ڈالر سیف ڈیپازٹ کی مدت میں توسیع دسمبر 2023ءتک کئے جانے کا امکان ہے جبکہ سیف ڈیپازٹ کی مد میں رکھی گئی رقم کو استعمال بھی نہیں کیا جا سکے گا۔

وزیر مملکت برائے خزانہ عائشہ غوث پاشا کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کے ساتھ ایک سالہ توسیع کا معاہدہ جلد طے پا جائے گا اور اس کے علاوہ سعودی عرب ماہانہ 10 کروڑ ڈالر کا ادھار تیل بھی دے گا۔ 

انہوں نے بتایا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان برادرانہ تعلقات ہیں جن کی بناءپر سعودی عرب سے 10 ماہ میں 1 ارب ڈالر کا موخر ادائیگیوں پر تیل ملے گا۔ 

واضح رہے کہ وزیراعظم شہباز شریف کی آج ہی سعودی ولی عہد سے ٹیلی فونک گفتگو ہوئی جس میں دونوں رہنماؤں نے باہمی دلچسپی کے امور اور دونوں ممالک کے مابین کئی شعبوں میں تعاون کے عزم کا اعادہ کیا۔

مصنف کے بارے میں