نیب کروڑوں روپے ریکور کرتا ہے ایک اچھا اسپتال ہی بنا لے، جسٹس آصف سعید

اسلام آباد: جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 2 رکنی بینچ نے پی پی رہنما شرجیل میمن کی درخواست ضمانت کی سماعت کی۔ عدالت کی جانب سے شرجیل میمن کی کیس کو آئندہ ہفتے مقررکرنے کی استدعا مسترد کر دی گئی۔

سماعت کے دوران جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیئے کہ میڈیا رپورٹس کے مطابق شرجیل میمن کو اسپتال میں پورا فلور دیا گیا۔ کسی نے کہا کہ نیب کے ہاتھوں ملزمان گرفتار ہوتے ہی بیمار ہو جاتے ہیں جبکہ نیب کروڑوں روپے ریکور کرتا ہے ایک اچھا اسپتال ہی بنا لے۔

 

جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیئے کہ عام طور پر میں میڈیا رپورٹس پر یقین نہیں رکھتا لیکن آج کل آنے والی میڈیکل رپورٹس پر عدالتیں محتاط ہو چکی ہیں۔ شرجیل میمن کی درخواست کو مرکزی کیس کے ساتھ سنا جائے گا۔ عدالت نے کیس کی سماعت جنوری کے پہلے ہفتے تک ملتوی کرتے ہوئے نیب کونوٹس جاری کر دیئے۔

 

 

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں