زینب قتل کیس کا فیصلہ محفوظ، 17 فروری کو سنایا جائے گا

لاہور: کوٹ لکھپت جیل لاہور میں قائم خصوصی عدالت میں چار روز تک کیس کی سماعت کی گئی ۔ انسداد دہشت گردی عدالت کے جج سجاد احمد نے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا اور 17 فروری ہفتہ کو سنایا جائے گا۔

یاد رہے گزشتہ روز ملزم عمران کے وکیل مہر شکیل نے کیس لڑنے سے انکار کرتے ہوئے کہا تھا کہ ضمیر کیس لڑنے کی اجازت نہیں دے رہا اور ملزم نے اقرار جرم بھی کر لیا۔ ملزم عمران کے وکیل کے انکار کے بعد عدالت نے ملزم کو نیا وکیل فراہم کر دیا تھا۔

 

اس سے قبل 12 فروری کو زینب قتل کیس میں عدالت نے ملزم عمران علی پر فرد جرم عائد کر دی تھی۔ پراسیکیوشن نے تفتیش مکمل کر کے 175 صفحات پر مشتمل چالان عدالت میں جمع کرایا جس میں ملزم عمران کو قصوروار ٹھہرایا گیا تھا۔چالان میں کہا گیا تھا کہ ملزم نے زینب سمیت 8 بچیوں کو زیادتی کے بعد قتل کیا جس کے تمام ثبوت موجود ہیں۔ 

 

واضح رہے پنجاب کے ضلع قصور سے اغواء کی جانے والی 7 سالہ بچی زینب کو زیادتی کے بعد قتل کر دیا گیا تھا جس کی لاش گذشتہ ماہ 9 جنوری کو ایک کچرا کنڈی سے ملی تھی۔

نیو نیوز کی براہ راست نشریات، پروگرامز اور تازہ ترین اپ ڈیٹس کیلئے ہماری ایپ ڈاؤن لوڈ کریں