انصاف کی فراہمی میں حائل پولیس اہلکاروں کو سخت سزا دی جائے، وزیراعظم

انصاف کی فراہمی میں حائل پولیس اہلکاروں کو سخت سزا دی جائے، وزیراعظم
کیپشن:   انصاف کی فراہمی میں حائل پولیس اہلکاروں کو سخت سزا دی جائے، وزیراعظم سورس:   فوٹو/اسکرین گریب

لاہور: وزیراعظم عمران خان نے کہا انصاف کی فراہمی کی راہ میں حائل پولیس اہلکاروں کو سخت سے سخت سزا دی جائے۔ وزیراعظم ایک روزہ دورے پر لاہور پہنچے ہیں جہاں ایوان وزیراعلیٰ میں ان کی زیر صدارت پنجاب پولیس میں کی جانے والی اصلاحات اور کارکردگی کے حوالے سے اجلاس ہوا۔ آئی جی پنجاب انعام غنی نے وزیراعظم کو پولیس کی کارکردگی میں بہتری لانے کیلئے کی جانے والی اصلاحات اور اقدامات پر برینفنگ دی۔ پولیس اسٹیشن کی مالی خودمختاری اور مصالحتی کونسل کے میکنزم کے حوالے سے آئی جی پنجاب کی مجوزہ تجاویز وزیر اعلیٰ پنجاب کو پیش کی گئیں۔

اس موقع پر وزیراعظم نے آئی پنجاب کو ہدایت کی کہ عوام کے جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنانے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لائے جائیں اور عوام کے مسائل کو میرٹ کی بنیاد پر حل کیا جائے جبکہ انصاف کی فراہمی میں حائل اہلکاروں کو سخت سے سخت سزا دی جائے کیونکہ ماضی میں پولیس میں سیاسی بنیادوں پر بھرتیاں کی گئیں جس کا نقصان عوام کو اٹھانا پڑا لیکن کوئی قانون سے کوئی بالاتر نہیں اور پولیس کسی سیاسی اثر و رسوخ کو خاطر میں نہ لائے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ عوام آپ سے تب مطمئن ہوں گے جب آپ سب سے یکساں اور قانون کے مطابق سلوک کریں گے جبکہ پولیس افسران جرائم کی روک تھام کے لئے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کریں اور تھانوں کا خود دورہ کریں۔ 

اجلاس کے دوران وزیراعظم کو لاہور میں قبضہ مافیا کے خلاف اقدامات پر مبنی پلان کے بارے میں بھی بریفنگ دی گئی۔ متعلقہ حکام نے اس دوران وزیراعظم کو قبضہ مافیا کیخلاف اب تک کے اقدامات اور مستقبل کے لائحہ عمل کے حوالے سے بتایا گیا کہ پنجاب حکومت ، لاہور پولیس اور انتظامیہ نے لاہور میں قبضہ مافیا کے خلاف بڑی کارروائی کرتے ہوئے دو سال میں 31 ارب روپے مالیت کی 1250 ایکڑ زمین قبضہ مافیا سے واگزر کروائی۔ 

وزیراعظم نے ہدایت کی کہ قبضہ مافیا اور بدمعاشوں کو کسی صورت معافی نہ دی جائے اور اس مافیا کے خلاف اقدامات بارے پنجاب حکومت اچھا کام کر رہی ہے۔