مونس الٰہی کیخلاف منی لانڈرنگ کے الزام میں مقدمہ درج

مونس الٰہی کیخلاف منی لانڈرنگ کے الزام میں مقدمہ درج

لاہور: وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) نے پاکستان مسلم لیگ (ق) کے رہنماءمونس الٰہی کیخلاف منی لانڈرنگ کے الزام میں مقدمہ درج کر لیا ہے۔ 

تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے نے سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کے بیٹے اور سابق وفاقی وزیر مونس الٰہی کیخلاف 720 ملین روپے کی منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کرنے کے علاوہ نواز بھٹی اور مظہر اقبال کے خلاف بھی منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کر کے انہیں گرفتار بھی کر لیا ہے۔ 

مونس الٰہی کے خلاف درج ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ ان کے خلاف منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت کارروائی کا آغاز 2 سال قبل ہوا، ان کے خلاف شوگر کمیشن نے منی لانڈرنگ کا انکشاف کیا تھا جبکہ مقدمہ ایف آئی اے اینٹی کرپشن سرکل کی رپورٹ پر درج کیا گیا ہے۔ 

ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ مونس الٰہی کے خلاف ہنڈی کے ذریعے رقم بیرون ملک بھیجنے کا الزام ہے اور تحقیقات میں شواہد ملنے پر (ق) لیگی رہنماءمونس الٰہی کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے 

ایف آئی آر کے مطابق گرفتار ملزمان نواز بھٹی سیکرٹری اسمبلی محمد خان بھٹی کا بھتیجا ہے جبکہ ملزم مظہر عباس چپڑاسی ہے، محمد خان بھٹی کے بھتیجے واجد کی گرفتاری کیلئے چھاپہ مار کارروائیاں شروع کر دی گئی ہیں۔

مصنف کے بارے میں