بھارت: مسلمان خواتین اسکول ٹیچرز کو حجاب اتارنے پر مجبور کیا جانے لگا

بھارت: مسلمان خواتین اسکول ٹیچرز کو حجاب اتارنے پر مجبور کیا جانے لگا
فاطمہ حسن متعلقہ اسکول میں ایک سال سے انگریزی پڑھا رہی تھیں۔۔۔۔۔فوٹو/ بشکریہ سوشل میڈیا

لکھنؤ: بھارتی ریاست اتر پردیش میں ایک خاتون مسلمان اسکول ٹیچر نے حجاب اتارنے پر مجبور کرنے پر استعفی دیدیا۔بھارتی ریاست اتر پردیش کے دارالحکومت لکھنؤ کے ایک اسکول میں ٹیچر فاطمہ حسن کو اسکول منیجمنٹ کی جانب سے کہا گیا کہ یا تو حجاب اتار دیں یا پھر استعفیٰ دے دیں کیونکہ حجاب کی وجہ سے اسکول انتظامیہ کو تقصان ہو رہا ہے۔


بھارتی میڈیا کے مطابق فاطمہ حسن متعلقہ اسکول میں ایک سال سے انگریزی پڑھا رہی تھیں اور وہ ہمیشہ سے حجاب استعمال کرتی تھیں لیکن کبھی بھی اسکول انتظامیہ کی جانب سے اس بات پر اعتراض نہیں کیا گیا۔

گزشتہ ماہ اسکول پرنسپل نے فاطمہ حسن سے کہا کہ آپ کو حجاب کے بغیر اسکول میں بچوں کو پڑھانا ہو گا کیونکہ آپ کے حجاب کی وجہ سے اسکول کو خسارے کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

فاطمہ حسن نے 3 نومبر کو اپنا استعفیٰ اسکول انتظامیہ کو پیش کیا جس میں انہوں نے لکھا کہ انہیں حجاب اتار کر ملازمت کرنا منظور نہیں ہے اس لیے وہ استعفیٰ دے رہی ہیں۔